کورونا وائرس کی جھوٹی علامات بتا کر کام سے چھٹی لینے ولا فراڈیہ پکڑا گیا

  ہفتہ‬‮ 23 مئی‬‮‬‮ 2020  |  17:49

نیویارک (این این آئی)امریکہ میں وفاقی پراسیکیوٹرز نے ایک شخص کے خلاف کورونا وائرس کی جھوٹی علامات بتا کر کام سے چھٹی لینے پر مقدمہ درج کر لیا ہے۔میڈیا رپورٹ کے مطابق سینٹون اینتونیو ڈیوس پر الزام ہے کہ انھوں نے امریکی شہر اینٹلانٹا میں اپنے مالک کو ڈاکٹر کا جعلی سرٹیفکیٹ بھیجا تھا،اس کے نتیجے میں کمپنی نے اپنا کام بند کیا، کام کرنے کی ساری جگہ کو سینیٹائزڈ کی اور کچھ ملازمین کو قرنطینہ میں بھی بھیجا اسدوران کمپنی نے اپنے سٹاف کوایک لاکھ ڈالر تنخواہیں بھی دیں۔بیان کے مطابق ایف بی آئی اس کیس کی تحقیقات کر رہی


ہے۔یہ وبا کے حوالے سے ہونے والی مجرمانہ بدعنوانیوں کا تازہ ترین کیس ہے جسے حکومت کی ٹاسک فورس سامنے لائی ہے۔ایف بی آئی کے سپیشل ایجنٹ کرس ہیکر نے کہاکہ یہ کیس اس بات کی یاد دہانی ہے کہ ہمیں بحران کے حوالے سے کسی بھی غلط کام کا سراغ لگانے، تحقیقات کرنے اور قانونی چارہ جوئی کرنے کے لیے ہوشیار رہنا ہے۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

کارٹرفارمولا

جمی کارٹر امریکا کے 39ویں صدر تھے‘ یہ 1977ءسے 1981ءتک دنیا کی سپر پاور کے سربراہ رہے‘ یہ 1924ءمیں جارجیا کے چھوٹے سے گاﺅں پلینز میں پیدا ہوئے ‘ زمین دار فیملی کے ساتھ تعلق تھا‘ والد مونگ پھلی اگاتے تھے‘ جوانی میں نیوی جوائن کر لی‘ والد کے انتقال کے بعد کھیتی باڑی شروع کر دی‘یہ بھی ....مزید پڑھئے‎

جمی کارٹر امریکا کے 39ویں صدر تھے‘ یہ 1977ءسے 1981ءتک دنیا کی سپر پاور کے سربراہ رہے‘ یہ 1924ءمیں جارجیا کے چھوٹے سے گاﺅں پلینز میں پیدا ہوئے ‘ زمین دار فیملی کے ساتھ تعلق تھا‘ والد مونگ پھلی اگاتے تھے‘ جوانی میں نیوی جوائن کر لی‘ والد کے انتقال کے بعد کھیتی باڑی شروع کر دی‘یہ بھی ....مزید پڑھئے‎