جون 2018ء سے ستمبر 2019ء کے دوران قرضوں میں کتنا بھاری اضافہ ہوا؟ وزارت خزانہ نے رپورٹ جاری کر دی

  جمعہ‬‮ 31 جنوری‬‮ 2020  |  23:13

اسلام آباد (این این آئی)وزارت خزانہ نے ڈیٹ پالیسی سٹیٹمنٹ 2019۔20 جاری کر دی جس میں کہاگیا ہے کہ جون 2018 تا ستمبر 2019 قرضوں میں 11 ہزار 610 ارب روپے اضافہ ہوا۔ رپورٹ میں کہاگیاکہ قرضوں میں اضافہ یکم جولائی 2018 سے 30 ستمبر 2019 کے دوران ہوا، مجموعی قرض جی ڈی پی کے 94.3 فیصد تک پہنچ گیا، ڈیٹ لیمیٹیشن ایکٹ کے مطابق قرض جی ڈی پی کا 60 فیصد سے زیادہ نہ ہو،قرضوں کا مجموعی بوجھ 41 ہزار 489 ارب روپے ہو گیا،مقامی حکومتی قرضوں کا حجم 22 ہزار 650 ارب روپے ہے، غیر ملکی حکومتی قرضوں


کا حجم 10 ہزار 598 ارب روپے ہے۔ دستاویز کے مطابق پاکستان کی مجموعی جی ڈی پی 44 ہزار 3 ارب روپے کی ہے، 2018.19 میں روپیہ کی قدر گرنے سے 3 ہزار 61 ارب روپے قرض بڑھا،پاکستان کا مجموعی قرض ریونیو اہداف سے 667 گنا زیادہ ہے۔ دستاویز کے مطابق ایف بی آر ریونیو اہداف جی ڈی پی کا صرف 5.6 فیصد ہے۔


موضوعات: