پاکستان سٹاک ایکسچینج کریش کر گئی ، سرمایہ کار کنگال، کھربوں روپے ڈوب گئے

  جمعرات‬‮ 2 دسمبر‬‮ 2021  |  15:05

کراچی (این این آئی) پاکستان اسٹاک مارکیٹ جمعرات کے روز کریش ہو گئی ،کے ایس ای100انڈیکس 2ہزار پوائنٹس گھٹ گیا جس کی وجہ سے انڈیکس 45ہزاراور44ہزار پوائنٹس کی دو نفسیاتی حد سے نیچے گر گیا اور43200پوائنٹس کی پست ترین سطح پر بند ہوا ،مندی کے سبب مارکیٹ میں سرمایہ کاروں کے 332ارب روپے سے زائد ڈوبگئے اور سرمائے کا مجموعی حجم 77کھرب روپے سے گھٹ کر74کھرب روپے رہ گیا ،شدید ترین کاروباری مندی سے 92.60فیصد حصص کی قیمتیں بھی گر گئیں۔جمعرات کو پاکستان اسٹاک کا بھٹہ بیٹھ گیا ۔ نومبر میں تجارتی خسارے میں اضافے کے باعث سرمایہ کار محتاط


ہوکر ٹریڈنگ کررہے ہیں اور اس وقت حصص کی فروخت زیادہ ہے جس کے باعث 100 انڈیکس سمیت تمام انڈیکس میں مندی کا رجحان غالب رہا ، رواں ماہ مہنگائی کی شرح میں اضافہ اور14 دسمبر کو اگلی مانیٹری پالیسی میں مہنگائی کی شرح کو کنٹرول کرنے کے لئے حکومت کی جانب سے شرح سود میں ایک فیصد اضافے کے خدشے پرسرمایہ کاروں تشویش بڑھ گئی ہے اور سرمایہ کار نہ صرف محتاط ہوکر حصص کی ٹریڈنگ کر رہے ہیں بلکہ منافع کیلئے بڑی فروخت کو بھی ترجیح دے رہے ہیں دوسری جانب 5ماہ میں روپے کی قدر 15فیصد کی مزید کمی اور ملکی قرضے50کھرب روپے تک پہنچنے کیساتھ 3سال میں 20کھرب روپے کااضافہ ہونے جیسی خبروں پر انویسٹرز ملکی معیشت کے حوالے سے تذبذب کا شکار ہیں۔ پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں جمعرات کو کے ایس ای 100انڈیکس میں2134.99پوائنٹس کی کمی ریکارڈ کی گئی جس سے انڈیکس 45369.14پوائنٹس سے کم ہو کر43234.15پوائنٹس ہو گیا اسی طرح877.90پوائنٹس کیکمی سے کے ایس ای30انڈیکس 17575.86پوائنٹس سے کم ہو کر 16697.96پوائنٹس ہو گیا جبکہ کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس30953.66پوائنٹس سے گھٹ کر29628.67پوائنٹس پر بند ہوا ۔کاروباری مندی کے سبب مارکیٹ کے سرمائے میں303کھرب32ارب26کروڑ74لاکھ 75ہزار411روپےکی کمی ریکارڈ کی گئی جس کے نتیجے میں مارکیٹ کا مجموعی سرمایہ77کھرب50ارب89کروڑ85لاکھ87ہزار75روپے سے گھٹ کر74کھرب18ارب63کروڑ11لاکھ11ہزار664روپے ہو گیا ۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں جمعرات کو 14ارب روپے مالیت کے 38کروڑ67لاکھ53ہزار حصص کے سودے ہوئے جبکہ بدھ کو9ارب روپے مالیت کے 24کروڑ10لاکھ69ہزار حصص کے سودے ہوئےتھے ۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں جمعرات کو مجموعی طور پر365کمپنیوں کا کاروبار ہوا جس میں سے16کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ ،338میں کمی اور11کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا ۔کاروبار کے لحاظ سے ورلڈ کال ٹیلی کام 3کروڑ30لاکھ ،ڈولمن سٹی2کروڑ95لاکھ ،بائیکو پیٹرولیم 2کروڑ28لاکھ ،یونٹی فوڈز لمیٹڈ 1کروڑ77لاکھ اور جی 3ٹیکنالوجیز 1کروڑ75لاکھ حصص کے سودوں سے سرفہرست رہے۔قیمتوں میں اتار چڑھا کے اعتبار سے یونی لیور فوڈز کے حصص کی قیمت میں1400.00روپے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس سے اسکے حصص کی قیمت بڑھ کر20400.00روپے ہو گئی اسی طرح 19.31روپے کے اضافے سے شیلڈ کارپوریشنکے حصص کی قیمت بڑھ کر293.77روپے ہو گئی جبکہ نیلسے پاکستان کے حصص کی قیمت میں171.54روپے کی کمی واقع ہوئی جس سے اسکے حصص کی قیمت گھٹ کر 5350.00روپے ہو گئی اسی طرح124.00روپے کی کمی سے رفحان میظ کے حصص کی قیمت کم ہو کر9775.00روپے پرآ گئی ۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

برف باری

یہ پرانی مثال ہے‘ ایک چھوٹا ہوائی جہاز کسی برفانی پہاڑ پر گرگیا‘ پائلٹ مر گیا‘ جہاز میں صرف دو مسافر سوار تھے‘ وہ دونوں بچ گئے‘ اب صورت حال یہ تھی‘ ہر طرف برف ہی برف تھی اور اس برف کے درمیان دو لوگ جہاز کے ملبے میں گرے پڑے تھے‘ دور دور تک کوئی آبادی نہیں تھی‘ خوراک ....مزید پڑھئے‎

یہ پرانی مثال ہے‘ ایک چھوٹا ہوائی جہاز کسی برفانی پہاڑ پر گرگیا‘ پائلٹ مر گیا‘ جہاز میں صرف دو مسافر سوار تھے‘ وہ دونوں بچ گئے‘ اب صورت حال یہ تھی‘ ہر طرف برف ہی برف تھی اور اس برف کے درمیان دو لوگ جہاز کے ملبے میں گرے پڑے تھے‘ دور دور تک کوئی آبادی نہیں تھی‘ خوراک ....مزید پڑھئے‎