پاکستانی شہری باپ کی کسی بھی ملک میں پیدا اولاد کی شہریت کیا ہوگی؟ہائیکورٹ نے تحریری حکم جاری کردیا

  اتوار‬‮ 3 مئی‬‮‬‮ 2020  |  15:14

لاہور ( آن لائن ) لاہور ہائیکورٹ نے جنوبی افریقہ کی شہریت کے حامل بچوں کی پاکستانی باپ سے بازیابی کی دائر درخواست پر اپنے تحریری حکم جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستانی شہری باپ کی کسی بھی ملک میں پیدا ہونیوالی اولاد پاکستانی ہی ہوگی، عدالت نے پاکستانی باپ سے بازیابی کی دائر درخواست پر درخواست گزار کو گارڈین عدالت سے رجوع کرنیکا حکم دیدیا ہے۔عدالت نے کہا کہ پاکستانی شہری باپ کی کسی بھی ملک میں پیدا ہونیوالی اولاد شہریت ایکٹ 1951 کے تحت پاکستانی شہری ہی ہو گی۔ جسٹس طارق سلیم شیخ نےجنوبی افریقی خاتون سمیعہ


موسس کی درخواست پر 23 صفحات پر مشتمل تحریری فیصلے کو عدالتی نظیر بھی قرار دیا ہے۔ تحریری فیصلہ میں گارڈین عدالت کو درخواست گزار کے بچوں عبدالحنان موسس اور ارشمان رضوان کی تحویل کی درخواست پر جلد فیصلہ کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔ فیصلہ میں کہا گیا ہے کہ درخواست گزار خاتون سمیعہ موسس گارڈین عدالت کی اجازت کے بغیر اپنے بچوں کو پاکستان سے باہر نہیں لے جا سکتیں۔ عدالت نے درخواست گزار خاتون کی دونوں بچوں سے ہر اتوار کے روز ملاقات کروانے کا بھی حکم دیا ہے۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

قاسم پاشا کی گلیوں میں

آیا صوفیہ کے سامنے دھوپ پڑی تھی‘ آنکھیں چندھیا رہی تھیں‘ میں نے دھوپ سے بچنے کے لیے سر پر ٹوپی رکھ لی‘ آنکھیں ٹوپی کے چھجے کے نیچے آ گئیں اور اس کے ساتھ ہی ماحول بدل گیا‘ آسمان پر باسفورس کے سفید بگلے تیر رہے تھے‘ دائیں بائیں سیکڑوں سیاح تھے اور ان سیاحوں کے درمیان ....مزید پڑھئے‎

آیا صوفیہ کے سامنے دھوپ پڑی تھی‘ آنکھیں چندھیا رہی تھیں‘ میں نے دھوپ سے بچنے کے لیے سر پر ٹوپی رکھ لی‘ آنکھیں ٹوپی کے چھجے کے نیچے آ گئیں اور اس کے ساتھ ہی ماحول بدل گیا‘ آسمان پر باسفورس کے سفید بگلے تیر رہے تھے‘ دائیں بائیں سیکڑوں سیاح تھے اور ان سیاحوں کے درمیان ....مزید پڑھئے‎