بھارتی آرمی چیف نے ایل اوسی پر پاک فوج کی طرف سے بھارتی ڈرونز مار گرا ئے جانے کا اعتراف کر لیا

  جمعرات‬‮ 10 جنوری‬‮ 2019  |  22:11

نئی دہلی (آئی این پی )بھارتی آرمی چیف جنرل بپن راوت نے لائن آف کنٹرول پر ڈرون کے ذریعے جاسوسی کرنے اور پاک فوج کی طرف سے ان ڈرونز کو مار گرائے جانے کا اعتراف کر لیا اور کہا کہ بھارت جنگ بندی کی خلاف ورزیوں میں ملوث ہے ۔وہ جمعرات کو یہاں پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے ۔ اس دوران بپن راوت نے کہا کہ بھارتی فوج پاکستان کے ساتھ لائن آف کنٹرول پر جاسوسی کرتی رہتی ہے ۔انہوں نے اس حقیقت کا بھی اعتراف کیا کہ بھارت نے چند روز قبل جاسوسی کے مقصد کی خاطر ایل


او سی پر دو ڈرون کوآڈ کاپٹرز بھیجے تھے جبکہ پاکستان کی جانب سے ان دونوں کو سرحد پر مار گرایا گیا ۔بھارتی فوج کے سربراہ نے اس بات کا بھی اعادہ کیا کہ بھارت یہ جانتے ہوئے کہ پاکستانی علاقے میں سرحد کے ساتھ شہری آبادی موجود ہے اس کے باوجود ایل او سی پر سیز فائر کی خلاف ورزیوں میں ملوث ہے ۔واضح رہے کہ گزشتہ ہفتے پاک فوج نے ایل او سی پر بھارتی فوج کے دو جاسوس ڈرونز مار گرائے تھے اور ڈی جی آئی پی آر میجر جنرل آصف غفور نے کہا تھا کہ سرجیکل سٹرائیک تو دور کی بات ہم بھارتی کوآڈ کاپٹرز کو بھی ایک انچ پاکستانی سرحد پر آنے نہیں دیتے ۔ انہوں مزید کہاکہ اب تک بھارت کا موقف طالبان کے ساتھ عدم مذاکرات کا رہا ہے۔ اس کا کہنا ہے کہ طالبان کے ساتھ کوئی بھی بات چیت افغانستان کی قیادت میں اور اس کی ذمہ داری میں ہونی چاہیے۔ انہوں نے کہاکہ بھارت کو طالبان کے ساتھ مذاکرات میں شامل ہونا چاہئے ۔

loading...