شعیب ملک کی گروپنگ کرنے کی خبریں عام پھر بھی سلیکشن کیوں کی گئی؟بڑے سوال اُٹھادیئے گئے

  ہفتہ‬‮ 22 جون‬‮ 2019  |  18:37

اسلام آباد (این این آئی) اسلام آباد ہائی کورٹ میں کرکٹ ٹیم میں مبینہ گروپنگ اور ٹیم سلیکشن کیخلاف رٹ دائر کر دی گئی۔ ہفتہ کو اسلام آباد ہائی کورٹ میں بلال فاروقی ایڈووکیٹ نے درخواست دائر کی۔درخواست میں موقف اختیار کیاگیاکہ ہزیراعظم عمران خان نے ٹیم کے کچھ کھلاڑیوں کو ریلوکٹا کہا،وزیراعظم کے بیان کے مطابق پی سی بی اور سلیکشن کمیٹی ناکام ہوگئی۔ درخواست میں کہاگیاکہ شعیب ملک کی گروپنگ کرنے کی خبریں عام پھر بھی سلیکشن سمجھ سے بالاترہے۔ میں کہاگیاکہ موجودہ ورلڈ کپ ٹیم میں گروپنگ کی خبروں پر فیکٹ فائنڈنگ کمیشن بنایا جائے۔درخواست میں استدعا


کی گئی کہ کرکٹ ٹیم میں گروپنگ کرنے والے کھلاڑیوں کے خلاف انکوائری کا حکم دیا جائے۔ درخواست میں کہاگیاکہ شعیب اختر،راشدلطیف اور محمد وسیم کو عدالتی معاونت کے لیے طلب کیا جائے۔درخواست میں کہاگیاکہ عدالت سلیکشن کمیٹی سے ٹیم سلیکشن کا طریقہ کار طلب کرے۔درخواست کے مطابق سلیکشن کمیٹی کے خلاف وزیراعظم کو کارروائی کا حکم دیاجائے۔درخواست میں پرنسپل سیکریٹری ٹووزیراعظم،سیکرٹری وزارت بین الصوبائی رابطہ اور پی سی بی فریق بنایاگیا جبکہ ٹیم کی سلیکشن کمیٹی کو بھی درخواست میں فریق بنایاگیا۔

موضوعات:

loading...