’’جو پاکستان جا کر کرکٹ میچ نہیں کھیلے گا وہ ٹیم سے باہر‘‘ سری لنکا نے پاکستان میں کھیلنے کیلئے دبنگ اعلان کر دیا

  جمعرات‬‮ 19 اکتوبر‬‮ 2017  |  15:56

کولمبو(آئی این پی)سری لنکا کے وزیرِ کھیل نے فاسٹ بولر لستھ مالنگا کی یہ درخواست مسترد کردی ہے کہ لاہورکے ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل کے لیے علیحدہ ٹیم منتخب کی جائے اور کہا ہے کہ پاکستان کے خلاف تینوں ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچوں کے لیے ایک ہی ٹیم منتخب کی جائے گی۔واضح رہے کہ لستھ مالنگا پاکستان کے خلاف ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچ کھیلنے کے لیے لاہور جانے کے لیے تیار نہیں ہیں، اسی لیے انھوں نے سری لنکا کےوزیرِ کھیل دیاسری جیاسکیرا سے درخواست کی تھی کہ اس سیریز کے لیے دو علیحدہ ٹیمیں منتخب کی جائیں لیکن وزیرِ کھیل


نے ان پر واضح کر دیا ہے کہ یہ ممکن نہیں۔سری لنکا کے وزیرِ کھیل کا یہ بھی کہنا ہے کہ یہ حق کھلاڑیوں کا نہیں کہ وہ اپنی مرضی کے میچز کا انتخاب کریں کہ کس میں انھیں کھیلنا ہے اور کس میں نہیں، اگر وہ پاکستان جا کر میچ نہیں کھیلنا چاہتے تو خود کو ٹیم سے باہر سمجھیں۔وزیرِ کھیل کا یہ بیان دراصل پاکستان کے دورے پر جانے کے سلسلے میں سری لنکن حکومت کی جانب سے باضابطہ توثیق بھی ہے۔ سری لنکن کرکٹ بورڈ پہلے ہی پاکستان کرکٹ بورڈ کی جانب سے سکیورٹی کی یقین دہانی پر اپنا مثبت ردعمل ظاہر کرچکا ہے۔خیال رہے کہ سری لنکا میں کرکٹ سمیت تمام ٹیموں کے سلیکشن کی حتمی منظوری کا اختیار وزارتِ کھیل کے پاس ہے۔پاکستان کے خلاف ٹی ٹوئنٹی سیریز کے لیے سری لنکن ٹیم کا اعلان بیس اکتوبر کو متوقع ہے۔لستھ مالنگا کے علاوہ کپتان اپل تھرنگا بھی پاکستان جانے سے انکار کرچکے ہیں لیکن دوسری جانب جن چالیس کھلاڑیوں نے پہلے پاکستان جانے کے سلسلے میں بورڈ کو اپنے تحفظات ظاہر کیے تھے ان میں سے بھی متعدد نے اپنی رائے تبدیل کردی ہے اور وہ پاکستان جانے کے لیے تیار ہوچکے ہیں۔پاکستان اور سری لنکا کے درمیان دو ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل چھبیس اور ستائیس اکتوبر کو ابوظہبی میں کھیلے جائیں گے جبکہ تیسرا اور آخری ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل انتیس اکتوبر کو لاہور میں ہوگا۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

ڈائیلاگ اور صرف ڈائیلاگ

سینٹ ہونو رینا  فرانس کے علاقے نارمنڈی سے تعلق رکھتی تھیں‘ یہ کیتھولک نن تھیں‘ کنواری تھیں‘ نارمنڈی میںکیتھولک کا قتل عام شروع ہوا تو سینٹ ہونورینا کو بھی مار کر نعش دریائے سین میں پھینک دی گئی‘ یہ نعش بہتی بہتی کون فلوینس  پہنچ گئی‘ کون فلوینس پیرس سے 24 کلومیٹر کے فاصلے پر چھوٹا سا گاﺅں ....مزید پڑھئے‎

سینٹ ہونو رینا  فرانس کے علاقے نارمنڈی سے تعلق رکھتی تھیں‘ یہ کیتھولک نن تھیں‘ کنواری تھیں‘ نارمنڈی میںکیتھولک کا قتل عام شروع ہوا تو سینٹ ہونورینا کو بھی مار کر نعش دریائے سین میں پھینک دی گئی‘ یہ نعش بہتی بہتی کون فلوینس  پہنچ گئی‘ کون فلوینس پیرس سے 24 کلومیٹر کے فاصلے پر چھوٹا سا گاﺅں ....مزید پڑھئے‎