نیب کا سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کو بڑا ریلیف دینے کا فیصلہ

  ہفتہ‬‮ 27 فروری‬‮ 2021  |  23:05

راولپنڈی (مانیٹرنگ ڈیسک)نیب نے ن لیگ کے رہنما اور سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے خلاف انکوائری بند کرنے کی سفارش کی ہے، ذرائع کے مطابق سابق وزیر خزانہ کے خلاف ٹیکس امور کی انکوائری بند کرنے کی سفارش کی گئی ہے،اس کے علاوہ سابق وزیرہاؤسنگ اکرم درانی کے خلاف بھی انکوائری بند کرنے کی سفارشکی گئی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ چیئرمین نیب نے ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس طلب کر لیاہے جس میں کچھ انکوائری بند کرنے اور کچھ انکوائریاں کرنے کی منظوری دی جائے گی۔ دریں اثناء مسلم لیگ ن کے سابق ایم این اے کیپٹن (ر)


محمد صفدر نے چیئرمین نیب کیخلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات کی انکوائری کیلئے ڈائریکٹر جنرل ایف آئی اے کو درخواست دے دی،کیپٹن ر محمد صفدر نے سابق رکن قومی اسمبلی کی حیثیت سے درخواست دی ہے، نجی کورئیر کمپنی کے ذریعے درخواست ڈی جی ایف آئی اے کو بھجوا دی،درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ چیئرمین نیب کے خلاف جوائنٹ انوسٹی گیشن ٹیم تشکیل دی جائے، جے آئی ٹی ایڈیشنل ڈی جی کے رینک کے آفیسر کی زیر نگرانی تشکیل دی جائے انکوائری ٹیم بغیر کسی دباؤ کے میرٹ پر تحقیقات کرے۔درخواست میں کہا گیا ہے کہ ملزم نے ذرائع آمدن سے زائد اثاثے بنا کر قانون کی خلاف ورزی کی ہے ملزم کو ذاتی حیثیت میں بذریعہ سمن طلب کر کے جواب طلبی کی جائے انکوائری میں الزامات ثابت ہونے پر مقدمہ درج کر کے ملزم کو گرفتار کیا جائے۔ درخواست کے متن میں کہا گیا ہے کہ جسٹس (ر) جاوید اقبال ایک اہم سرکاری ادارے کے سربراہ ہیں اربوں روپے کی جائیدادیں بنارکھی ہیں یہ جائیدادیں اپنی فیملی اور بے نامی داران کے نام پر آمدن سے زائد بنا رکھی ہیں جسکا ریکارڈ ملزم کے ذاتی، فیملی اور بے نامی داران کے بینک اکاؤنٹس،ٹیکس ریکارڈ سے مل سکتا ہے پاکستان میں ہاؤسنگ سوسائٹیز، ریونیو اتھارٹیز، فیملی اور بے نامی داران کی کمپنیز کا ریکارڈ دیکھا جاسکتا ہے۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

جوں کا توں

چاچا چنڈ میرے کالج کے زمانے کا ایک کردار تھا‘ وہ ڈپریشن اور غربت کا مارا ہواخود اذیتی کا شکار ایک مظلوم شخص تھا‘ وہ دوسروں کی ہر زیادتی‘ ہر ظلم اور ہر توہین کا بدلہ اپنے آپ سے لیتا تھا‘ لوگوں نے ”چاچا چنڈ“ کے نام سے اس کی چھیڑ بنا لی تھی‘ پنجابی زبان میں تھپڑ ....مزید پڑھئے‎

چاچا چنڈ میرے کالج کے زمانے کا ایک کردار تھا‘ وہ ڈپریشن اور غربت کا مارا ہواخود اذیتی کا شکار ایک مظلوم شخص تھا‘ وہ دوسروں کی ہر زیادتی‘ ہر ظلم اور ہر توہین کا بدلہ اپنے آپ سے لیتا تھا‘ لوگوں نے ”چاچا چنڈ“ کے نام سے اس کی چھیڑ بنا لی تھی‘ پنجابی زبان میں تھپڑ ....مزید پڑھئے‎