ملک بھر میں راشن ڈپو قائم کرنے پر غور شروع ، راشن کارڈز بنائے جانے کا امکان

  جمعرات‬‮ 26 ‬‮نومبر‬‮ 2020  |  23:52

بہاولنگر (این این آئی ) روز مرہ استعمال کی اشیاء کی آئے روز قلت اور قیمتوں میں اضافے کو مد نظر رکھتے ہوئے حکومت نے ملک بھر میں راشن ڈپو قائم کرنے پر غور شروع کردیا ہے اور اس سلسلہ میں پرائیویٹ سیکٹر کیساتھ ساتھ سرکاری اداروںکی باہمی مشاورت سے یہ راشن ڈپو یونین کونسل کی سطح پر قائم کئے جائینگے جہاں پریوٹیلٹی سٹور کی طرز پر تمام اشیاء میسر آئینگی اور اس سلسلہ میں فیملی کارڈز بنائے جائینگے فیملی کے لوگ ہر پندرہ دن کے بعد راشن ڈپو جاکر اپنی فیملی کیلئے اشیاء خرید سکیں گے راشن کارڈ پر


فیملی کے ممبران کی تعداد کا اندراج ہوگا پیدا اور فوت شدگان کا اندراج و اخراج کروانا فیملی کے سربراہ کی ذمہ داری ہوگی فیملی ممبران کے مطابق لوگوں کو اشیاء فراہم کی جائینگی فیملی کے جتنے ممبران ہونگے اس کے مطابق آٹا‘ چینی‘ گھی‘ دالیں اور دیگر اشیاء ہر 15 دن کے بعد فراہم کی جائینگی اس کا مقصد بے جا ذخیرہ اندوزی‘ منافع خوری کو روکنے کیساتھ ساتھ عوام کو ضرورت کے مطابق اشیاء کی فراہمی کو یقینی بنانا ہے۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

بلیک سٹارٹ

آپ بجلی کے تازہ ترین بریک ڈائون کو سمجھنے کے لیے گاڑی کی مثال لیں‘ گاڑی کو انجن چلاتا ہے لیکن ہم انجن کو سٹارٹ کرنے کے لیے اسے بیٹری کے ذریعے کرنٹ دیتے ہیں‘ بیٹری کا کرنٹ انجن کو سٹارٹ کر دیتا ہے اور انجن سٹارٹ ہو کر گاڑی چلا دیتا ہے‘ آپ اب فرض کیجیے انجن راستے میں ....مزید پڑھئے‎

آپ بجلی کے تازہ ترین بریک ڈائون کو سمجھنے کے لیے گاڑی کی مثال لیں‘ گاڑی کو انجن چلاتا ہے لیکن ہم انجن کو سٹارٹ کرنے کے لیے اسے بیٹری کے ذریعے کرنٹ دیتے ہیں‘ بیٹری کا کرنٹ انجن کو سٹارٹ کر دیتا ہے اور انجن سٹارٹ ہو کر گاڑی چلا دیتا ہے‘ آپ اب فرض کیجیے انجن راستے میں ....مزید پڑھئے‎