حکمران اگر سود نہیں چھوڑیں گے تو انہیں خساروں کا ہی سامنا رہے گا،انتہائی خوبصورت اور مثبت تنقید

  اتوار‬‮ 12 جولائی‬‮ 2020  |  0:44

فیصل آباد (آن لائن)جماعت اسلامی کے صوبائی امیرجاویدقصوری نے کہا ہے کہ حکمرانوں کے خوشحالی آنے کے دعوئوں پر عوام اس وقت تک یقین نہیں کریں گے جب تک مہنگائی کا پہاڑ ان کی گردنوں سے اتر نہیں جاتا۔ حکمران اگر سود نہیں چھوڑیں گے تو انہیں خساروں کا ہی سامنا رہے گا، غریب کو جب آٹا ، دال ، چینی اور گھی سستا ملے گا تو وہ سمجھ جائیں گے کہ معیشت بہتر ہو گئی ہے ۔22کروڑ عوام مایوس اور پریشان ہیںمگر حکمران روزانہ معاشی ترقی کے بلندو بانگ دعوے کر کے عوام کے زخموں پر نمک پاشی کر


رہے ہیں۔ان خیالات کا اظہار نے المرکزالاسلامی چنیوٹ بازار میں ضلعی و زونل ذمہ داران،ضلعی سیاسی کمیٹی، برادرتنظیمات کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پرصوبائی نائب امیرسردارظفرحسین خان،صوبائی جنرل سیکرٹری بلال قدرت بٹ ، ڈپٹی جنرل سیکرٹری محبوب الزماں بٹ،ضلعی امیر عظیم رندھاوا،صدر ضلعی سیاسی کمیٹی میاں طاہرایوب،صدر جے آئی یوتھ عمرگجر اور دیگر بھی موجود تھے۔ انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی بلدیاتی انتخابات میں بھر پورطریقہ سے حصہ لے گی ، عوام نے ن لیگ اورپیپلزپارٹی کے بعد پی ٹی آئی کو بھی آزمالیا ہے،عوام اب کسی کے دھوکہ میں نہیں آئیں گے، قوم کی امیدوں پر پورااتریں گے ، تبدیلی کے دعوے داروں نے عوام سے جینے کاحق بھی چھین لیا ہے،لوگوں کے چہروں پر مایوسی اور اضطراب ہے ۔ مہنگائی اوربے روز گاری نے عوام سے راتوں کی نیند چھین لی ہے۔۔انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے دوسال میں بیڈ گورننس کے سارے ریکارڈ توڑ دیے ہیں ۔ عوام نظام کی تبدیلی چاہتے ہیں مگر حکمران سرکاری افسروں کی اکھاڑ پچھاڑ میں لگے ہوئے ہیں اور بیوروکریسی کے چند افسروں کو ادھر ادھر کر کے سمجھتے ہیں کہ تبدیلی آگئی۔انہوں نے کہا کہقرضوں میں کمی کا دعویٰ کرنے والوں نے قوم کو مزید قرضوں کے جال میں پھنسا دیا ہے ۔ وزیراعظم نےپاکستان کو مدینہ کی طرز پر اسلامی ریاست بنانے، سب کے بے لاگ احتساب ، کشکول اٹھانے پر موت کو ترجیح دینے ، ایک کروڑ نوکریوں اور پچاس لاکھ بے گھر لوگوں کو گھر دینے کے جو بلند و بانگ دعوے کئے تھے ۔ہوائوںمیں بکھر چکے ہیں ۔اقتصادی محاذ پر حکومت چاروں شانے چت ہوچکی ہے، معاشی اور اقتصادی زبوں حالی نے مہنگائی اور بے روزگاری میں اضافہ کیاہے جس کی وجہ سے عوام کے اندر سخت مایوسی اور بے چینی پائی جارہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت اپنے کسی ایک وعدے کو بھی پورا نہیں کر سکی جس کی وجہ سے حالات پہلے سے بھی بدترین ہو گئے ہیں ۔حکمران عوام کو ریلیف دینے اور ملک میں استحکام لانے کی بجائے بوجھ ثابت ہوئے ہیں۔


موضوعات: