7 سے زائد شدت کے زلزلے نے جاپان کو ہلا کر رکھ دیا

  ہفتہ‬‮ 13 فروری‬‮ 2021  |  21:46

ٹوکیو(آن لائن )جاپان کے دارالحکومت اور دیگر علاقوں کو 7 سے زائد شدت کے زلزلے نے ہلا کر رکھ دیا۔تفصیلات کے مطابق ایشیائی ملک جاپان کے کئی علاقوں میں انتہائی شدید زلزلہ آیا ہے۔ ماضی میں سونامی کی تباہی کا شکار ہونے والے جاپانی علاقوں میں خوف و ہراس پھیل گیا، سونامی وارننگ جاری نہیں ہوئی۔ فوری طورپر کسی جانی و مالی نقصان کی اطلاعات نہیں ملی ہیں۔ دوسری جانب روس کے دارالحکومت ماسکو میں پڑنے والی شدید برف باری اور طوفان کے بعد نقل وحمل شدید متاثر اور نظام زندگی مفلوج ہوکر رہ گیا ہے۔عالمی خبر رساں ایجنسی کے


مطابق ماسکو میں ہونے والی شدید برف باری کے سبب شہر کی سڑکیں برف سے اٹ گئی ہیں اور پھسلن کے سبب راہگیروں کو چلنے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے جبکہ متعدد پروازیں بھی تاخیر کا شکار ہوگئی ہیں۔روس کے محکمہ موسمیات کے مطابق ماسکو میں درجہ حرارت منفی 15 سینٹی گریڈ تک گر گیا ہے جبکہ 18 میٹر فی سیکنڈ کی رفتار سے ہوائیں چل رہی ہیں۔مقامی حکام نے لوگوں کو درختوں سے دور رہنے اور گھروں میں رہنے کی ہدایت کردی ہے۔ روس کے محکمہ موسمیات کے اہلکار ایوجینی تیشیکوف کا کہنا ہے کہ یہ ایک حقیقی برفانی طوفان ہے، یہ برفانی تباہی ہے۔ یہ عام الرٹ نہیں ہے بلکہ ایک جنگی انتباہ ہے۔رپورٹ کے مطابق ماسکو شہر میں اب تک 56 سنٹی میٹر برف پڑ چکی ہے۔ ماسکو میں یہ برف باری فروری میں پڑنے والی رکارڈ برف باری میں سے ایک ہے۔ اس سے قبل 1973 میں ماسکو میں 60 سنٹی میٹر برف پڑ چکی ہے۔ایک کروڑ 12 لاکھ آبادی والے ماسکو میں ایئر پورٹس پر پروازیں شدید متاثر ہوئی ہیں۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

روکا روکی کا کھیل

میں آج سے چھ سال پہلے بائی روڈ اسلام آباد سے ملتان گیا تھا‘ وہ سفر مشکل اور ناقابل برداشت تھا‘ رات لاہور رکنا پڑا‘ اگلی صبح نکلے تو ملتان پہنچنے میں سات گھنٹے لگ گئے‘ سڑک خراب تھی اور اس کی مرمت جاری تھی لہٰذا گرمی‘ پسینہ اور خواری بھگتنا پڑی‘ ہفتے کے دن چھ سال بعد ایک بار ....مزید پڑھئے‎

میں آج سے چھ سال پہلے بائی روڈ اسلام آباد سے ملتان گیا تھا‘ وہ سفر مشکل اور ناقابل برداشت تھا‘ رات لاہور رکنا پڑا‘ اگلی صبح نکلے تو ملتان پہنچنے میں سات گھنٹے لگ گئے‘ سڑک خراب تھی اور اس کی مرمت جاری تھی لہٰذا گرمی‘ پسینہ اور خواری بھگتنا پڑی‘ ہفتے کے دن چھ سال بعد ایک بار ....مزید پڑھئے‎