بھارت میں بڑی تبدیلی آنے لگی! مسلم مدارس میں ہزاروں ہندو طلبہ کے پڑھنے کا انکشاف

  منگل‬‮ 18 فروری‬‮ 2020  |  12:23

مغربی بنگال (این این آئی)بھارتی ریاست مغربی بنگال میں 6 ہزار سے زائد مدارس میں غیر مسلم طلبہ تعلیم حاصل کررہے ہیں اور ان کی تعداد میں بھی مسلسل اضافہ ہورہا ہے۔مغربی بنگال میں مدرسہ بورڈ کے حالیہ امتحانات میں شریک 70 ہزار طلبہ میں سے تقریباً 18 فیصد ہندو ہیں جو ایک ریکارڈ ہے۔ گزشتہ برس امتحان میں غیر مسلم طلبہ کی تعداد 12.77 فیصد تھی۔مغربی بنگال مدرسہ ایجوکیشن بورڈ کے صدر ابو طاہر قمرالدین کہتے ہیںکہ ریاست کے 3 اضلاع کے 4 سب سے بڑے مدارس میں غیر مسلم طلبہ کی تعداد زیادہ ہے۔انہوں نے کہا کہ غیر


مسلم طلبہ زیادہ تر ثانوی سطح کے مدرسوں میں داخلہ لیتے ہیں کیونکہ اِن مدارس کا نصاب سیکنڈری بورڈ کے مطابق ہوتا ہے۔ایک مدرسے کی ہندو طالبہ سین کا کہنا ہے کہ مدرسے میں مذہب کی بنیاد پر اْن کے ساتھ کبھی امتیازی سلوک نہیں کیا گیا۔پچھلے سال مدرسہ بورڈ کے امتحانات میں لڑکیوں کی تعداد تقریباً 60 فیصد تھی۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

خطوط کی آخری کتاب

عطاء الحق قاسمی صاحب لیجنڈ ہیں‘ یہ پوری زندگی پڑھاتے رہے یہ پروفیسر ہیں‘ یہ پوری زندگی کالم لکھتے رہے یہ کالم نگار بھی ہیں‘ یہ پوری زندگی شعر بھی کہتے رہے یہ شاعر بھی ہیں گو ان کے شعر ’’عدل کو بھی صاحب اولاد ہونا چاہیے‘‘ کو ان سے زیادہ میاں شہباز شریف نے پڑھااور مجھے بعض اوقات محسوس ....مزید پڑھئے‎

عطاء الحق قاسمی صاحب لیجنڈ ہیں‘ یہ پوری زندگی پڑھاتے رہے یہ پروفیسر ہیں‘ یہ پوری زندگی کالم لکھتے رہے یہ کالم نگار بھی ہیں‘ یہ پوری زندگی شعر بھی کہتے رہے یہ شاعر بھی ہیں گو ان کے شعر ’’عدل کو بھی صاحب اولاد ہونا چاہیے‘‘ کو ان سے زیادہ میاں شہباز شریف نے پڑھااور مجھے بعض اوقات محسوس ....مزید پڑھئے‎