انسان غلط کام خود کرتا ہے اور پھر کہتا ہے اللہ مالک چوہدری شجاعت باتوںباتوں میں بہت کچھ کہہ گئے

  جمعرات‬‮ 4 مارچ‬‮ 2021  |  11:34

لاہور(آئی این پی) پاکستان مسلم لیگ (ق) کے صدر سابق وزیراعظم چودھری شجاعت حسین نے کہا ہے کہ انسان غلط کام خود کرتا ہے اور پھر کہتا ہے کہ اللہ مالک ہے، کالا کبھی سفید نہیں ہو سکتا جب تک خود اس کو ٹھیک کرنے کیلئے محنت نہ کی جائے۔ تفصیلات کے مطابق

سابق وزیراعظم چوہدری شجاعت حسین اور اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویزالہی سے دعوت اسلامی کی مرکزی مجلس شوری کے نگران حاجی محمد عمران عطاری نے ملاقات کی، ملاقات میں مرکزی مجلس شوری کے رکن حاجی یعفور رضا عطاری، چودھری صباحت الہی، رانا خالد اور آصف پولانی بھی موجود تھے۔ حاجی عمران عطاری اور حاجی یعفور رضا عطاری نے چوہدری شجاعت حسین کو دعوتِ اسلامی کے مختلف شعبہ جات بارے بریفنگ دی، جب کہ حاجی عمران عطاری نے چودھری شجاعت حسین کی جلد اور مکمل صحت یابی کیلئے خصوصی دعا بھی کروائی۔ اس موقع پر چوہدری شجاعت حسین کا کہنا تھا کہ دعوت اسلامی نے تبلیغ اسلام کا منصب بڑے احسن انداز سے سنبھال رکھا ہے، اسلام کی دعوت دینے والے بندے اللہ تعالی کی بارگاہ میں بہت مقرب ہوتے ہیں، ہمیں خود اپنے اعمال ٹھیک کرنا ہوں گے۔ چوہدری شجاعت حسین نے نے دعوتِ اسلامی کی مختلف شعبہ جات خصوصا جیلوں میں قیدیوں کی اصلاح

کے اقدام کو سراہتے ہوئے کہا کہ اللہ تعالی نے انسان کو عقل سے نوازا ہے اور اچھے برے کی تمیز سکھائی ہے، اللہ تعالی اپنے بندوں کو موقع دیتا ہے کہ وہ اپنے گناہوں سے سچی توبہ کر کے سیدھا راستہ اختیار کر لے، انسان غلط کام خود کرتا ہے اور پھر کہتا ہے کہ اللہ مالک ہے، کالا کبھی سفید نہیں ہو سکتا جب تک خود اس کو ٹھیک کرنے کیلئے محنت نہ کی جائے۔



موضوعات:

زیرو پوائنٹ

یہ بھی پاکستان ہے

یہ تین لوگوں کی تین کہانیاں ہیں‘ میں جب ان تینوں لوگوں سے متعارف ہوا‘ میں نے ان کی داستانیں سنی تو میرا پہلا تاثر تھا کیا یہ بھی پاکستانی ہیں؟ اور اگر یہ پاکستانی ہیں تو پھر ہم کون ہیں؟ آپ کو اس سوال کے جواب سے پہلے یہ تین کہانیاں پڑھنی چاہییں۔ پہلی کہانی کے ہیرو خالد جاوید ....مزید پڑھئے‎

یہ تین لوگوں کی تین کہانیاں ہیں‘ میں جب ان تینوں لوگوں سے متعارف ہوا‘ میں نے ان کی داستانیں سنی تو میرا پہلا تاثر تھا کیا یہ بھی پاکستانی ہیں؟ اور اگر یہ پاکستانی ہیں تو پھر ہم کون ہیں؟ آپ کو اس سوال کے جواب سے پہلے یہ تین کہانیاں پڑھنی چاہییں۔ پہلی کہانی کے ہیرو خالد جاوید ....مزید پڑھئے‎