نوازشریف سے ابتدائی مشاورت مکمل،جہانگیر ترین کی جلد لندن روانگی متوقع

1  جون‬‮  2023

اسلام آباد (این این آئی)آئندہ عام انتخابات میں مسلم لیگ (ن)سے ایڈجسٹمنٹ یا انتخابی اتحاد کیلئے جہانگیر ترین کی جلد لندن روانگی متوقع ہے۔ذرائع کے مطابق جہانگیر خان ترین کے اہم سیاستدانوں اور پی ٹی آئی کے ناراض و الگ ہونے والے رہنماؤں سے قریبی رابطے اورملاقاتیں کیں۔سینئر رہنما جہانگیر ترین نے مسلم لیگ ن کے قائد میاں نواز شریف کیساتھ بھی ابتدائی مشاورت کرلی۔

ذرائع کے مطابق مستقبل میں سیاسی طور پر ساتھ چلنے پر بھی ابتدائی مشاورت کی گئی۔ ذرائع کے مطابق جہانگیر ترین نے تحریک انصاف کے سابق اراکین قومی اسمبلی اور سینیٹرز سے رابطے مکمل کرلئے۔ ترین کے قریبی ذرائع کے مطابق اب تک تحریک انصاف کے پچاس سے زیادہ سابق اراکین قومی و صوبائی اسمبلی ترین گروپ کو اپنی حمایت کا یقین دلا چکے ہیں۔آئندہ عام انتخابات میں مسلم لیگ ن سے ایڈجسٹمنٹ یا انتخابی اتحاد کیلئے جہانگیر ترین کا لندن جانے کا بھی پلان ہے،جہانگیر ترین کا دورہ آئندہ چند روز میں متوقع ہے۔

ذرائع کے مطابق جہانگیر ترین قائد ن لیگ نوازشریف سے ملاقات کرینگے،ملاقات میں ترین گروپ اور ن لیگ کے درمیان آئندہ کی سیاسی حکمت عملی اور تعاون کا طریقہ کار طے کیا جائے گا۔ذرائع کے مطابق (ن)لیگ نے جہانگیر ترین کی حالیہ سرگرمیوں اور جوڑ توڑ پر کچھ تحفظات کا اظہار کیا تھا، ذرائع کے مطابق ترین نے وزیر اعظم شہباز شریف اور نواز شریف پیغام بھجوایا کہ ان کی سیاسی کوششیں (ن)لیگ کیلئے نقصان دہ نہیں ہونگی

موضوعات:



کالم



ہم بھی کیا لوگ ہیں؟


حافظ صاحب میرے بزرگ دوست ہیں‘ میں انہیں 1995ء سے…

مرحوم نذیر ناجی(آخری حصہ)

ہمارے سیاست دان کا سب سے بڑا المیہ ہے یہ اہلیت…

مرحوم نذیر ناجی

نذیر ناجی صاحب کے ساتھ میرا چار ملاقاتوں اور…

گوہر اعجاز اور محسن نقوی

میں یہاں گوہر اعجاز اور محسن نقوی کی کیس سٹڈیز…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے (آخری حصہ)

میاں نواز شریف کانگریس کی مثال لیں‘ یہ دنیا کی…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے

بودھ مت کے قدیم لٹریچر کے مطابق مہاتما بودھ نے…

جنرل باجوہ سے مولانا کی ملاقاتیں

میری پچھلے سال جنرل قمر جاوید باجوہ سے متعدد…

گنڈا پور جیسی توپ

ہم تھوڑی دیر کے لیے جنوری 2022ء میں واپس چلے جاتے…

اب ہار مان لیں

خواجہ سعد رفیق دو نسلوں سے سیاست دان ہیں‘ ان…

خودکش حملہ آور

وہ شہری یونیورسٹی تھی اور ایم اے ماس کمیونی کیشن…

برداشت

بات بہت معمولی تھی‘ میں نے انہیں پانچ بجے کا…