آئندہ عام انتخابات کے بعد آنیوالی نئی حکومت کو فوری طورپر کتنے ارب ڈالر کے قرض کی ادائیگی کا بندوبست کرنا پڑے گا؟حیرت انگیزانکشاف

  جمعہ‬‮ 10 فروری‬‮ 2017  |  23:07

کراچی(آئی این پی)بڑے قرضوں کی ادائیگی کا وقت آپہنچا، پاکستان کو آئندہ تین سال میں آئی ایم ایف، پیرس کلب اور بانڈز کی مدت معیاد مکمل ہونے پر کئی قرضے چکانے ہونگے۔معیشت کا پہیہ چلانے کی خاطر گزشتہ کئی دہائیوں سے ہر آنے والی حکومت نئے قرضے کا بوجھ عوام پر چھوڑ جاتی ہیں جس کے باعث پاکستان پر بیرون قرضوں کا حجم 74 ارب ڈالر سے تجاوز کر چکا ہے۔

قرض جس سے بھی لیا جائے آخر قرض تو قرض ہی ہوتا ہے اور واپس بھی کرنا ہی ہوتا ہے۔ سال 2017 سے 2020 کے دوران پاکستانی بانڈز کی مدت معیاد مکمل ہونے پر حکومت 2 ارب 75 کروڑ ڈالر ادا کرنے کی پاپند ہو گی۔ذرائع کے مطابق ، دوسری جانب آئندہ دو سال کے دوران ہی پیرس کلب اور آئی ایم ایف کے قرضوں کی ادائیگیاں بھی شروع ہو جائیں گی۔ واضح رہے کہ پیرس کلب کے 11 ارب 70 کروڑ ڈالر کے قرضوں کو 2001 میں ری شیڈیول کیا گیا تھا۔



موضوعات:

زیرو پوائنٹ

سائوتھ افریقہ

جنوبی افریقہ ایک دل چسپ ملک ہے‘ افریقہ کے انتہائی جنوب میں واقع ہے‘ موسم آسٹریلیا‘ نیوزی لینڈ اور ارجنٹائن کی طرح باقی دنیا سے الٹ ہے‘ ہمارے ملک میں جب کڑاکے کی گرمی پڑتی ہے تو جنوبی افریقہ میں اس وقت سردی ہوتی ہے اور ہماری سردیوں میں سائوتھ افریقہ میں گرمی ہوتی ہے‘یہ ملک 1488ء میں پرتگالیوں نے ....مزید پڑھئے‎

جنوبی افریقہ ایک دل چسپ ملک ہے‘ افریقہ کے انتہائی جنوب میں واقع ہے‘ موسم آسٹریلیا‘ نیوزی لینڈ اور ارجنٹائن کی طرح باقی دنیا سے الٹ ہے‘ ہمارے ملک میں جب کڑاکے کی گرمی پڑتی ہے تو جنوبی افریقہ میں اس وقت سردی ہوتی ہے اور ہماری سردیوں میں سائوتھ افریقہ میں گرمی ہوتی ہے‘یہ ملک 1488ء میں پرتگالیوں نے ....مزید پڑھئے‎