شاہ محمود قریشی کی جناح ہائوس جلا ئوگھیرا ئوسمیت تین مقدمات میں عبوری ضمانت میں 7جولائی تک توسیع

27  جون‬‮  2023

لاہور( این این آئی)انسداد دہشتگردی کی خصوصی عدالت نے جناح ہائوس جلا ئوگھیرا ئوسمیت تین مقدمات میں تحریک انصاف کے وائس چیئرمین شاہ محمود قریشی کی عبوری ضمانت میں 7جولائی تک توسیع کر دی۔انسداد دہشتگردی کی خصوصی عدالت کے جج اعجاز احمد بٹر نے شاہ محمودقریشی کی تین مقدمات میں عبوری درخواست ضمانت پرسماعت کی۔

رہنما پی ٹی آئی نے عبوری ضمانت کے لئے عدالت میں خود پیش ہو کر حاضری مکمل کروائی۔وکیل نے موقف اختیار کیا کہ شاہ محمود قریشی کو بے بنیاد مقدمات میں شامل کیا گیا، وہ اپنے خلاف مقدمات میں اپنی بے گناہی ثابت کرنے کیلئے تفتیش میں شامل ہونا چاہتے ہیں۔ عبوری ضمانت منظور کی جائے،عدالت نے مقدمہ کا ریکارڈ طلب کرتے ہوئے عبوری ضمانت میں 7جولائی تک توسیع کر دی۔پی ٹی آئی کے سینئر رہنما کے خلاف تھانہ سرور روڈ، تھانہ گلبرگ اور تھانہ ریس کورس میں مقدمات درج ہیں۔عدالت میں پیشی کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے کہا کہ آج یا کل بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کا پول کھلنے والا ہے،ڈار صاحب کو آئی ایم ایف کے آگے گھٹنے ٹیکنے پڑے، جو بجٹ پیش ہوا اور جو پاس ہوا اس میں دن اور رات کا فرق تھا، کوئی پاکستانی قوم کو اس مایوسی سے نکالنے کیلئے منصوبہ بندی اور صف بندی نہیں کر رہا، دبئی بیٹھک کے بڑے چرچے ہیں،صف بندی صرف حصول اقتدار کے لئے ہو رہی ہے ،پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ (ن) کی قیادت حصول اقتدار کے لئے دبئی میں ہیں،وزارت عظمی کے لئے بھاگ دوڑ کی جارہی ہے، بلاول بھٹو اور مریم نواز وزارت عظمی کے امیدوار ہیں۔ انہوںنے کہا کہ بھارت کے وزیراعظم کے بیان پر کسی نے اس کو جواب نہیں دیا، نریندر مودی کہتا ہے پاکستان اپنی موت آپ مررہا ہے، افسوس وزیراعظم پاکستان اس بیان پر خاموش ہیں، پاکستان کا ہر شہری پوچھ رہا ہے کیا میرے معاشی حالات کی کوئی بات کررہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کی کوشش ہے وہ مستقبل کی بات کرے، جیل سے جب سے رہا ہوا ہوں شخصیات پر بات نہیں کررہا۔

موضوعات:



کالم



مرحوم نذیر ناجی(آخری حصہ)


ہمارے سیاست دان کا سب سے بڑا المیہ ہے یہ اہلیت…

مرحوم نذیر ناجی

نذیر ناجی صاحب کے ساتھ میرا چار ملاقاتوں اور…

گوہر اعجاز اور محسن نقوی

میں یہاں گوہر اعجاز اور محسن نقوی کی کیس سٹڈیز…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے (آخری حصہ)

میاں نواز شریف کانگریس کی مثال لیں‘ یہ دنیا کی…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے

بودھ مت کے قدیم لٹریچر کے مطابق مہاتما بودھ نے…

جنرل باجوہ سے مولانا کی ملاقاتیں

میری پچھلے سال جنرل قمر جاوید باجوہ سے متعدد…

گنڈا پور جیسی توپ

ہم تھوڑی دیر کے لیے جنوری 2022ء میں واپس چلے جاتے…

اب ہار مان لیں

خواجہ سعد رفیق دو نسلوں سے سیاست دان ہیں‘ ان…

خودکش حملہ آور

وہ شہری یونیورسٹی تھی اور ایم اے ماس کمیونی کیشن…

برداشت

بات بہت معمولی تھی‘ میں نے انہیں پانچ بجے کا…

کیا ضرورت تھی

میں اتفاق کرتا ہوں عدت میں نکاح کا کیس واقعی نہیں…