فواد چودھری کو وزارت اطلاعات کا قلمدان دیے جانے سے متعلق شبلی فراز نے اہم اعلان کر دیا

  اتوار‬‮ 11 اپریل‬‮ 2021  |  23:16

اسلام آباد (این این آئی)پاکستان تحریک انصاف کے سینیٹر شبلی فراز نے کہا ہے کہ مریم نواز کے رویئے کی وجہ سے پی ڈی ایم کو نقصان پہنچا ہے، فواد چودھری کو وزارت اطلاعات کا قلمدان دینے کا سرکاری طور پر اعلان نہیں ہوا۔ پیپلز پارٹی کو شوکاز نوٹس جاری کرنا مناسب نہیں،(ن) لیگ کا رویہ آمرانہ ہے۔ ایک انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ مریم نواز سمجھتی ہیں کہ پی ڈی ایم میں شامل دیگر جماعتیں صرف تالیاں بجانے کیلئے ہیں۔ ڈسکہ الیکشن کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئےشبلی فراز نے کہا کہ 90ہزار سے زیادہ ووٹ لئے ہم


تھوڑی سی محنت کرتے تو یہ الیکشن جیت جاتے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ فواد چودھری کو وزارت اطلاعات کا قلمدان دینے کا سرکاری طور پر اعلان نہیں ہوا۔دوسری جانب تحریک انصاف کے رہنما سینیٹر فیصل واوڈا نے بلدیہ ٹائون کے مختلف علاقوں کے دورے کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میں اپنے علاقے کا چکر لگانے آیا ہوںمہار اورجیت اللہ کے ہاتھ میں ہے،کہیں کوئی کام ہوا ہے تو صرف تحریک انصاف نے کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کی کوئی سیاسی حیثیت نہیں ہے۔مخالفیں میرے نام سے تقریر شروع اور ختم کرتے ہیں ۔میں نے اچار دینے تو نہیں آنا میں کام کررہا ہوں۔یہ علاقہ میرا تھا ہے اور رہے گا ۔اس حلقے میں شہباز شریف کو شکست دی۔میں اپنے لیے ووٹ مانگنے نہیں ایا ۔امجد افریدی عمران خان کا امیدوار ہے۔فیصل واوڈا نے کہا کہ کسی کو گالی دی تو اچھا نہیں ہوگا ۔نواز شریف واپس آئے تو ہم اسے سیٹ واپس کردینگے ۔حلقے میں جوش وجذبہ بہت ہے۔کوئی بھی جیتے حکم خدا کا چلے گا۔انہوں نے کہا کہ باپ بھگوڑا ہے بیٹی منہ چھپا کر پھر رہی ہے عمران خان نے سب کو تتر بتر کردیا ہے۔ہم نے تو بہت انتظار کیا کہ پی ڈی ایم اسلام اباد آئے نہیں ۔ہم نے پی ڈی ایم کو اپریل فول بنا دیا ہے۔


زیرو پوائنٹ

درمیان

یہ ایک ڈاکٹر کی کہانی ہے‘ ڈاکٹر صاحب اس وقت آسٹریلیا میں ہیں اور یہ وہاں ایسی شان دار زندگی گزار رہے ہیں جس کا ان کے کسی کلاس فیلو نے خواب تک نہیں دیکھا تھا‘ ہم سب لوگ زندگی میں ٹاپ کرنا چاہتے ہیں‘ ہم ہر کلاس میں اول آنا چاہتے ہیں‘ ہم بازار کا مہنگا ترین لباس خریدنا ....مزید پڑھئے‎

یہ ایک ڈاکٹر کی کہانی ہے‘ ڈاکٹر صاحب اس وقت آسٹریلیا میں ہیں اور یہ وہاں ایسی شان دار زندگی گزار رہے ہیں جس کا ان کے کسی کلاس فیلو نے خواب تک نہیں دیکھا تھا‘ ہم سب لوگ زندگی میں ٹاپ کرنا چاہتے ہیں‘ ہم ہر کلاس میں اول آنا چاہتے ہیں‘ ہم بازار کا مہنگا ترین لباس خریدنا ....مزید پڑھئے‎