لانگ مارچ اقتدار سے کوسوں دور مولانا فضل الرحمان کا اپنی جیب گرم رکھنے کا بہانہ قرار

  پیر‬‮ 8 مارچ‬‮ 2021  |  23:40

لاہور( این این آئی)صوبائی وزیر جیل خانہ جات فیاض الحسن چوہان نے کہا ہے کہ ’’کڑوا کڑوا تھو، میٹھا میٹھا ہپ‘‘کے فارمولے پر کاربند نام نہاد اتحادی اپوزیشن جماعتیں ملک پر اپنی مرضی کا غاصبانہ نظام دوبارہ رائج کرنا چاہتی ہیں۔ اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ گزشتہ سال کی طرح اس سال بھی اپوزیشن استعفوں کا چلا ہوا کارتوں استعمال کرے گی۔ پی ڈی ایم جانتی ہے کہ اسمبلیوں سے استعفے دینے کے بعد انکا دوبارہ اقتدار میں آنا ناممکن ہے۔ انہوں نے مزیدکہا کہ لانگ مارچ اقتدار سے کوسوں دور مولانا فضل الرحمان کا اپنی جیب گرم


رکھنے کا بہانہ ہے۔ گزشتہ سال کی طرح اس سال بھی مولانا فضل الرحمان اتحادی جماعتوں بالخصوص پیپلز پارٹی اور پاکستان مسلم لیگ ن سے چار سے پانچ ارب روپے ہتھیانے کے چکروں میں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت میں شامل اتحادی جماعتوں کی جانب سے پی ڈی ایم کو ٹکا سا جواب ملنے کے بعد وزیر اعظم عمران خان کی قیادت میں حکومت پہلے سے زیادہ مضبوط ہے۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

جوں کا توں

چاچا چنڈ میرے کالج کے زمانے کا ایک کردار تھا‘ وہ ڈپریشن اور غربت کا مارا ہواخود اذیتی کا شکار ایک مظلوم شخص تھا‘ وہ دوسروں کی ہر زیادتی‘ ہر ظلم اور ہر توہین کا بدلہ اپنے آپ سے لیتا تھا‘ لوگوں نے ”چاچا چنڈ“ کے نام سے اس کی چھیڑ بنا لی تھی‘ پنجابی زبان میں تھپڑ ....مزید پڑھئے‎

چاچا چنڈ میرے کالج کے زمانے کا ایک کردار تھا‘ وہ ڈپریشن اور غربت کا مارا ہواخود اذیتی کا شکار ایک مظلوم شخص تھا‘ وہ دوسروں کی ہر زیادتی‘ ہر ظلم اور ہر توہین کا بدلہ اپنے آپ سے لیتا تھا‘ لوگوں نے ”چاچا چنڈ“ کے نام سے اس کی چھیڑ بنا لی تھی‘ پنجابی زبان میں تھپڑ ....مزید پڑھئے‎