بے شک ہم خود مر جائیں، ہم نے تھانہ جلا دینا ہے، منہ زور وکلاء کی دیدہ دلیری، تھانے میں کھڑے ہو کر دھمکیاں

  ہفتہ‬‮ 16 جنوری‬‮ 2021  |  18:31

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) اسلام آباد کے ایک تھانے میں وکلاء کی بدمعاشی، اس موقع پر ایک وکیل رہنما نے کہا کہ ایس ایچ او صاحب صبح تک ایسی تیسی ہو جانی ہے، ہم نے سارا تھانہ جلا دینا ہے، وکیل رہنما نے کہا کہ یہ بات میں آپ کو بتا دوں کہ بے شک ہم لوگ خود مر جائیں لیکن ہم نے سارا تھانہ جلا دینا ہے، یہ ہماری طرف سے آخری وارننگ ہے،اس بات پر پولیس آفیسر مسکرایا تو وکیل نے کہاکہ اس بات پر مسکراؤ نہیں، یہ بہت بڑی بات ہو گئی ہے۔ وکلاء کی نظر میں


پولیس کی یہ عزت ہے جو وہ تھانہ جلانے کی بات کر رہے ہیں، قانون کی تشریح کرنے والے قانون کی حفاظت کرنے والوں کو دھمکیاں دینے لگے۔ دوسری جانب پولیس کے چھاپوں اور مبینہ نارروا سلوک کے خلاف احتجاج کرنے والے تاجروں کے خلاف تھانہ اکبری منڈی میں مقدمہ درج کر لیاگیا۔مختلف مارکیٹوں کے تاجروں نے پولیس کے چھاپوں اور مبینہ ناروا سلوک کے خلاف ہفتہ کے روز سر کلر روڈ پراحتجاجی مظاہرہ کیا تھا جس سے اطراف کی شاہراہوں پر گھنٹوں ٹریفک جام رہی۔ تھانہ اکبری منڈی پولیس نے احتجاج کرنے والے تاجروں کے خلاف مختلف دفعات کے تحت مقدمہ درج کر لیاہے۔ مقدمے میں جاوید بٹ، عمر بٹ، چوہدری فیاض سمیت دیگر تاجروں کو نامزد کیا گیا ہے۔لاہور راوی روڈ پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے سوشل میڈیا پر لاہور پولیس کے افسران کو جان سے مار دینے کی دھمکیاں دینے والے ملزمان کوگرفتار کرلیا۔ملزمان کے قبضہ سے ناجائز اسلحہ،4 کلو چرس اور موٹر سائیکل برآمدکرلی گئی۔ گرفتار ملزمان میں علی اکبر عرف اورنعمان عرف نومی شامل ہیں۔ ملزمان بھتہ خوری، قتل، اقدام قتل اور منشیات کے متعدد مقدمات میں ریکارڈ یافتہ ہیں۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

میرے دو استاد

سنتوش آنند 1939ء میں سکندر آباد میں پیدا ہوئے‘ یہ بلند شہر کا چھوٹا سا قصبہ تھا‘ فضا میں اردو‘ تہذیب اور جذبات تینوں رچے بسے تھے چناں چہ وہاں کا ہر پہلا شخص شاعر اور دوسرا سخن شناس ہوتا تھا‘ سنتوش جی ان ہوائوں میں پل کر جوان ہوئے‘ علی گڑھ مسلم یونیورسٹی سے لائبریری سائنس کی ڈگری لی ....مزید پڑھئے‎

سنتوش آنند 1939ء میں سکندر آباد میں پیدا ہوئے‘ یہ بلند شہر کا چھوٹا سا قصبہ تھا‘ فضا میں اردو‘ تہذیب اور جذبات تینوں رچے بسے تھے چناں چہ وہاں کا ہر پہلا شخص شاعر اور دوسرا سخن شناس ہوتا تھا‘ سنتوش جی ان ہوائوں میں پل کر جوان ہوئے‘ علی گڑھ مسلم یونیورسٹی سے لائبریری سائنس کی ڈگری لی ....مزید پڑھئے‎