وفاقی دارالحکو مت میں  بھکاریوں  کیخلاف  کریک ڈاونگزشتہ 24 گھنٹوں  میں  153 بھکاری   گرفتار 

24  ‬‮نومبر‬‮  2020

اسلام آباد(آن لائن )وفاقی دارالحکو مت کو بھکاریوں سے پاک کرنے کے لئے ضلع بھر کے افسران کو بڑے پیمانے پر کریک ڈاون کے احکامات جاری کردئیے گئے ہیں، پیشہ ور بھکاریوں اور ان کے سہولت کاروں کو گرفتار کرکے ان کے خلاف مقدمات درج کئے جائیں، گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 153 بھکاریوں کو گرفتار کیا گیا، ڈی آئی جی آپریشن اسلام آباد وقارالدین سید کا کہناہے

ضلع بھر کے افسران کو اس سلسلہ میں خصوصی سکواڈز تشکیل دینے اور روزانہ کی بنیاد پر کریک ڈاون کرنے کا ٹاسک دے دیا گیا ہے۔  تفصیلا ت کے مطا بق انسپکٹر جنر ل آ ف پولیس اسلام آ باد محمد عامر ذوالفقار خا ن کے احکا ما ت کی روشنی میں ڈی آئی جی آ پر یشنز اسلام آ بادوقارالد ین سید نے زونل ایس پیز کو وفاقی دارالحکو مت میں پیشہ ور بھکا ریو ں اور ان کی سرپرستی کرنے والے ٹھیکیداروں کے خلاف کا رروائی کا ٹا سک دیا ، ان احکا ما ت کی روشنی میں پولیس ٹیمو ں نے بھکا ریو ں کے خلاف چلا ئی جا نے والی مہم کے دوران153 بھکا ریوں کو شہر کے مختلف مقاما ت سے گرفتار کر کے ان کے خلاف قانو نی کارروائی عمل میں لائی گئی ہے ، اس سلسلہ میں بھکا ریو ں کی گرفتار ی کے لیے اسکا ر ڈز تشکیل دئیے گئے ہیں ، جن سے روزانہ کی بنیا د پر رپو ر ٹ لی جارہی ہے ،ڈی آئی جی آ پر یشنز نے تما م ایس پیز زون کو ہد ا یا ت جا ری کر تے ہو ئے کہا کہ وفاقی دارالحکو مت میں بھکا ریو ں کے خلاف کا رروائی کے عمل میں مزید تیز ی لا ئی جا ئے،مسا جد ،امام با ر گا ہو ں ، تجا رتی مراکز پر کو ئی بھکا ری نظر آ ئے تو اس کے خلاف فوری کا رروائی عمل میں لا ئی جائے،انہو ں نے کہا کہ وفاقی دارالحکومت سے اس مکروہ کاروبار میں ملوث عناصر کا خاتمہ کیا جائے اور اس کارروائی کو مزید موثر بناتے ہوئے جاری رکھا جائے،انہوں نے مزید کہا کہ مختلف گروپس اور کریمینل گینگز جو کہ ان بھکاریوں کی پشت پناہی اور ٹرانسپورٹ مہیا کرنے میں ملوث ہیں ان کے

خلاف فوری کا رروائی عمل میں لا ئی جا ئے ، انہو ں نے کہا کہ بھکاری بچوں اور بچیوں کو پکڑ کر شیلٹر ہومز اور چائلڈ پروٹیکشن سنٹرز بھجوایا جائے تاکہ وہاں ان کی تربیت کر کے ان کو ایک عام اور مہذب شہری بنایا جا سکے۔مزید بر آں ڈی آئی جی اسلام آ باد نے تما م پولیس افسران کو ہد ا یا ت کر تے ہو ئے کہا کہ سیکور ٹی ڈیو ٹی کو یقینی بنا یا جا ئے ،

داخلی و خا رجی راستو ں سمیت مسا جد اما م با رگاہو ں پر سخت چیکنگ کی جا ئے ، پٹر ولنگ کو با مقصد بنا یا جا ئے ، مشکو ک و مشتبہ عنا صر کی کڑ ی نگر انی کی جا ئے تا کہ کسی بھی قسم کے نا خو شگو ار واقع سے بچاجا سکے ، جر ائم پیشہ عناصر کے خلاف کر یک ڈا?ن کر تے ہو ئے ان کی گرفتار ی کو یقینی بنا یا جائے۔

موضوعات:



کالم



مرحوم نذیر ناجی(آخری حصہ)


ہمارے سیاست دان کا سب سے بڑا المیہ ہے یہ اہلیت…

مرحوم نذیر ناجی

نذیر ناجی صاحب کے ساتھ میرا چار ملاقاتوں اور…

گوہر اعجاز اور محسن نقوی

میں یہاں گوہر اعجاز اور محسن نقوی کی کیس سٹڈیز…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے (آخری حصہ)

میاں نواز شریف کانگریس کی مثال لیں‘ یہ دنیا کی…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے

بودھ مت کے قدیم لٹریچر کے مطابق مہاتما بودھ نے…

جنرل باجوہ سے مولانا کی ملاقاتیں

میری پچھلے سال جنرل قمر جاوید باجوہ سے متعدد…

گنڈا پور جیسی توپ

ہم تھوڑی دیر کے لیے جنوری 2022ء میں واپس چلے جاتے…

اب ہار مان لیں

خواجہ سعد رفیق دو نسلوں سے سیاست دان ہیں‘ ان…

خودکش حملہ آور

وہ شہری یونیورسٹی تھی اور ایم اے ماس کمیونی کیشن…

برداشت

بات بہت معمولی تھی‘ میں نے انہیں پانچ بجے کا…

کیا ضرورت تھی

میں اتفاق کرتا ہوں عدت میں نکاح کا کیس واقعی نہیں…