بچوں سے نازیبا کام کرنیوالے کیس کا صرف ایک ماہ میں فیصلہ، مجرموں کو سزائے موت سنا دی گئی

  جمعہ‬‮ 25 ستمبر‬‮ 2020  |  23:40

گلگت(این این آئی) عدالت نے اسکردو میں بچوں کے ساتھ برا سلوک کرنے والے کیس کا صرف ایک ماہ میں فیصلہ سناتے ہوئے دو مجرموں کو سزائے موت اور 10، 10 لاکھ روپے جرمانے کا حکم دے دیا۔گلگت میں عدالت نے اسکردو میں بچوں کے ساتھ غلط کام کرنے والے کیس میں بڑا فیصلہ سنا دیا۔ عدالت کے جج محمود الحسن نے ایک ماہ کے اندر کیسکا فیصلہ سناتے ہوئے بچوں کے ساتھ برا سلوک کرنے والے 2 مجرموں کو سزائے موت اور 10، 10 لاکھ روپے جرمانہ جب کہ ایک ملزم مبارک کو عمر قید اور 5 لاکھ روپے


جرمانہ کی سزا کا حکم دیا۔کیس میں سزا پانے والے مجرموں میں مظفر عباس، تجمل حسین اور مبارک شامل ہیں جب کہ مجرموں سے 9 عدد غیر اخلاقی وڈیوز بھی برآمد کی گئی ہیں۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

صرف تین ہزار روپے میں

دنیا میں جہاں بھی اردو پڑھی جاتی ہے وہاں لوگ مختار مسعود کو جانتے ہیں‘ مختار مسعود بیورو کریٹ تھے‘ ملک کے اعلیٰ ترین عہدوں پر رہے‘ لاہور کا مینار پاکستان ان کی نگرانی میں بنا‘ یہ اس وقت لاہور کے ڈپٹی کمشنر تھے‘ چارکتابیںلکھیںاور کمال کر دیا‘ یہ کتابیں صرف کتابیں نہیں ہیں‘ یہ تاریخ‘ جغرافیہ اور پاکستان کے ....مزید پڑھئے‎

دنیا میں جہاں بھی اردو پڑھی جاتی ہے وہاں لوگ مختار مسعود کو جانتے ہیں‘ مختار مسعود بیورو کریٹ تھے‘ ملک کے اعلیٰ ترین عہدوں پر رہے‘ لاہور کا مینار پاکستان ان کی نگرانی میں بنا‘ یہ اس وقت لاہور کے ڈپٹی کمشنر تھے‘ چارکتابیںلکھیںاور کمال کر دیا‘ یہ کتابیں صرف کتابیں نہیں ہیں‘ یہ تاریخ‘ جغرافیہ اور پاکستان کے ....مزید پڑھئے‎