جڑواں شہروں میں ڈبل ڈیکر بس سروس کا باقاعدہ آغاز، خوشخبری سنا دی گئی

  جمعہ‬‮ 14 اگست‬‮ 2020  |  19:00

راولپنڈی (امین این آئی) مشیر وزیر اعلیٰ پنجاب آصف محمود نے کہا ہے کہ بہت جلد ڈبل ڈیکر بس سروس کا باقا عدہ آغاز کر دیا جائے گا، راولپنڈی اور اسلام آباد سمیت دوسرے علاقوں سے آنے والے سیاح لطف اندوز ہوسکیں گے ،ڈبل ڈیکر بس سروس  عوام کی رسائی کو آسان بنانے کے لیے آن لائن بکنگ کی جائے گی۔ مشیر وزیر اعلیٰ پنجاب آصف محمود نے ٹی ڈی سی پی اور پی ایچ اے کے اشتراک سے ڈبل ڈیکر بس سروسکی تعارفی شو میں شرکت کی ۔پی ایچ اے افسران امور سکول کی طا لبات بھی موجود تھیں


۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مشیر وزیر اعلیٰ پنجاب نے کہاکہ بہت جلد ڈبل ڈیکر بس سروس کا باقا عدہ آغاز کر دیا جائے گا ۔ انہوںنے کہاکہ جڑواں شہروں سمیت دیگر علاقوں سے آنے والے سیاح لطف اندوز ہو سکیں گے۔ انہوں نے کہاکہ راولپنڈی اسلام آباد کیلئے مزید دو ڈبل ڈیکر بسز منگوائی جا رہی ہیں۔آصف محمود نے کہاکہ ڈبل ڈیکر بس کا ٹرمینل کا کام تکمیل کے آخری مراحل میں داخل ہو چکا ہے۔ آصف محمود نے کہاکہ ڈبل ڈیکر بس کا مقصد سیاحت کا فروغ اور دیگر ممالک سے آئے سیاحوں کی دونوں شہروں کے تاریخی اور سیاحتی مقامات تک آسان رسائی ہے۔آصف محمود نے کہاکہ ڈبل ڈیکر بس سروس  عوام کی رسائی کو آسان بنانے کے لیے آن لائن بکنگ کی جائے گی۔ مشیر وزیر اعلیٰ پنجاب آصف محمود نے کہا ہے کہ بہت جلد ڈبل ڈیکر بس سروس کا باقا عدہ آغاز کر دیا جائے گا، راولپنڈی اور اسلام آباد سمیت دوسرے علاقوں سے آنے والے سیاح لطف اندوز ہوسکیں گے ،ڈبل ڈیکر بس سروس  عوام کی رسائی کو آسان بنانے کے لیے آن لائن بکنگ کی جائے گی۔ مشیر وزیر اعلیٰ پنجاب آصف محمود نے ٹی ڈی سی پی اور پی ایچ اے کے اشتراک سے ڈبل ڈیکر بس سروس کی تعارفی شو میں شرکت کی ۔پی ایچ اے افسران امور سکول کی طا لبات بھی موجود تھیں ۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

“Be Kind To Yourself”

سکواڈرن لیڈر محمد اقبال ائیرفورس کے ریٹائر افسر ہیں‘ جسمانی عمر 73 برس ہے لیکن جذباتی 30 سال سے اوپر نہیں گئی‘ بچے بڑے ہیں اور مطمئن زندگی گزار رہے ہیں‘ اہلیہ کا انتقال ہو چکا ہے‘ یہ انہیں بہت مس کرتے ہیں‘ تین چار سو لطیفے یاد ہیں‘ جہاں کھڑے ہوتے ہیں وہاں چند منٹوں میں قہقہے ....مزید پڑھئے‎

سکواڈرن لیڈر محمد اقبال ائیرفورس کے ریٹائر افسر ہیں‘ جسمانی عمر 73 برس ہے لیکن جذباتی 30 سال سے اوپر نہیں گئی‘ بچے بڑے ہیں اور مطمئن زندگی گزار رہے ہیں‘ اہلیہ کا انتقال ہو چکا ہے‘ یہ انہیں بہت مس کرتے ہیں‘ تین چار سو لطیفے یاد ہیں‘ جہاں کھڑے ہوتے ہیں وہاں چند منٹوں میں قہقہے ....مزید پڑھئے‎