پنجرے سے طوطا آزاد کرنے پرسفاک شخص نے اپنی 8 سالہ ملازمہ کوموت کے گھاٹ اتار دیا،# جسٹس فار زہرہ سوشل میڈیا پر ٹاپ ٹرینڈ‎بن گیا

  بدھ‬‮ 3 جون‬‮ 2020  |  14:44

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)8سالہ ملازمہ سے پنجرہ غلطی سے کھل گیا اور طوطا پنجرے سے اڑنے پر مالک نے معصوم ملازمہ کو غصے میں آکر موت کے گھاٹ اتار دیا ۔ تفصیلات کے مطابق راولپنڈی بحریہ ٹاؤن میں 8 سالہ ملازمہ زہرہ شاہ نے طوطے سے کھیلنے کی کوشش کی تو غلطی سے پنجرہ کھل گیا اور طوطا اڑگیا جس پر مالک نے تشدد کرتے ہوئے 8 سالہ بچی کی جان لے لی۔ قتل کیخلاف عوام سفاک شخص کیخلاف میدان میں آگئی ، جسٹس فار زہر ہ ٹویٹر پر ٹاپ ٹرینڈ بن گیا ۔ پولیس نے ملزم کو گرفتار کرلیا۔سوشل میڈیا


صارفین نے نہ صرف سفاک شخص مکروہ اقدام کی مذمت کی بلکہ نوٹس نہ لینے پر وزارت انسانی حقوق کو بھی شدید تنقید کا نشانہ بنایا ۔


موضوعات: