مریم نواز مائنس ہونیوالی ہیں،بڑی پیش گوئی کردی گئی

  اتوار‬‮ 8 دسمبر‬‮ 2019  |  22:16

اسلام آباد(آن لائن)پی ٹی آئی کے مرکزی رہنما جہانگیر خان ترین نے کہا ہے کہ  عمران خان نہیں بلکہ مریم نواز مائنس ہونیوالی ہیں،مائنس عمران خان کا کوئی سوچ بھی نہیں سکتا،جن لوگوں پر کیسز ہیں وہ ملک سے باہر جانا چاہتے ہیں۔اتوار کو  میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاپیپلز پارٹی اور ن لیگ نے معیشت کا بیڑا غرق کیا،ان کا بویا ہوا ہم کاٹ رہے ہیں۔انہوں نے کہا معیشت کو سنبھال رہے ہیں اور مہنگائی پر بھی قابو پائیں گے۔چیف الیکشن کمشنرکی تعیناتی اور آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع سے متعلق قانون سازی پر کئے


گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا ہماری اور اپوزیشن کی آئینی ذمہ داری ہے کہ مل بیٹھیں۔پارلیمنٹ سپریم ہے قانون سازی کرسکتی ہے۔مریم نواز کی بیرون ملک جانے کی درخواست پر انہوں نے کہا جن لوگوں پر کیسز ہیں وہ ملک سے باہر جانا چاہتے ہیں۔نوا شریف کی تیمار داری کیلئے ان کے بیٹے موجود ہیں۔انہوں نے کہاکہ  عمران خان نہیں بلکہ مریم نواز جلد ملک سے مائنس ہونیوالی ہیں۔مولانا فضل الرحمان سے متعلق سوال پر انہوں نے کہا ان کا آنا جانا لگا رہتاہے۔قبل ازیں انہوں نے ایک ٹوئٹ میں کہا کہ  نیشنل ہائی وے اتھارٹی میں اصلاحات کے لیے مراد سعید نے زبردست محنت کی جس کی وجہ سے ادارے کی آمدن میں رواں سال 62 فی صد سے زائد اضافہ ہوا۔ انہوں نے مزید کہا کہ کرپشن کے خلاف مہم سے 11 اعشاریہ 7 ارب وصولی کی گئی، ادارہ جاتی اخراجات کم کر کے 24 کروڑ روپے بچائے گئے، نتائج مراد سعید اور ان کی ٹیم کی محنت کا منہ بولتا ثبوت ہیں۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

ہمیں جاگنا ہو گا

چارلی ہیبڈو فرانس کا ایک ہفت روزہ میگزین ہے‘ یہ میگزین 1970ء میں شروع ہوا‘1981ء میں بند ہوا پھر 1991ء میں دوبارہ لانچ ہوا اور انتظامیہ نے اسے فروری2015ء میں ہمیشہ کے لیے بند کرنے کا فیصلہ کر لیا‘ مالکان شرارتی ذہنیت کے مالک ہیں‘یہ میگزین کو مشہور کرنے کے لیے نبی اکرمؐ کے گستاخانہ خاکے شائع کرتے ....مزید پڑھئے‎

چارلی ہیبڈو فرانس کا ایک ہفت روزہ میگزین ہے‘ یہ میگزین 1970ء میں شروع ہوا‘1981ء میں بند ہوا پھر 1991ء میں دوبارہ لانچ ہوا اور انتظامیہ نے اسے فروری2015ء میں ہمیشہ کے لیے بند کرنے کا فیصلہ کر لیا‘ مالکان شرارتی ذہنیت کے مالک ہیں‘یہ میگزین کو مشہور کرنے کے لیے نبی اکرمؐ کے گستاخانہ خاکے شائع کرتے ....مزید پڑھئے‎