گھناؤناکاروبار پکڑا گیا،مضر صحت کیمیکلز سے پکائے گئے ایک ہزار 262 کلو آم تلف،افسوسناک انکشافات

  بدھ‬‮ 26 جون‬‮ 2019  |  21:45

لاہور(این این آئی) وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان کی ہدایت پر عوام کو صحت مند خوراک کی فراہمی یقینی بنانے کی کاوش کو عملی جامہ پہنانے کیلئے پنجاب فوڈا تھارٹی نے مضر صحت کیمیکلز سے پھلوں کو پکانے والوں کے خلاف صوبہ بھر میں کریک ڈاؤن کیا۔مضر صحت کیمیکلز کے استعمال سے تیار شدہ ایک ہزار 262 کلوآم تلف کر دیے گئے۔تفصیلات کے مطابق مضر صحت کیمیکلز سے پھلوں کو پکانے والوں کے خلاف پنجاب فوڈ اتھارٹی نے صوبہ بھر میں کریک ڈاؤن کیا۔ لاہور زون کی 11 منڈیوں کے 114، راولپنڈی زون میں 125 جبکہ ملتان زون کی 13منڈیوں کے91


سٹالز کی چیکنگ کی گئی۔ پنجاب فوڈ اتھارٹی کی فوڈ سیفٹی ٹیموں نے 35 فروٹ منڈیوں میں موجود ایک ہزار 262 کلو کیمیکل زدہ آم تلف کر دیے۔مزید برآں مضر صحت کیمیکل کے عدم استعمال بارے آگاہی پھیلانے اورپھلوں کے کاروبار سے منسلک افراد کے لیے 443 سیمینار بھی کروائے گئے ہیں۔صوبہ بھر کی منڈیوں میں 330 سٹالز کی چیکنگ کے دوران 105سٹالز کو اصلاحی نوٹسز بھی جاری کیے گئے۔ ڈی جی فوڈ اتھارٹی کا کہنا تھا کہ موسم گرما میں آم کی زیادہ مانگ کی بناء پر پھل کو جلد پکانے کیلئے کیلشیئم کاربائیڈ کا استعمال کیا جاتا ہے۔کیلشیئم کاربائیڈ میں موجود آرسینک اور فاسفورس کے ذرات کینسر سمیت متعدد بیماریوں کا سبب بنتے ہیں۔جدید ممالک کی طرح پھلوں کو پکانے کیلئے ایتھالین گیس کا استعمال انسانی صحت کیلئے محفوظ ہے۔کیپٹن (ر) محمد عثمان نے واضح کیا کہ گرمیوں میں کیلشیم کاربائیڈ سے پکائے جانے والے پھلوں کی صورت میں زہر بیچنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔حکومت پنجاب کا مشن ''محفوظ خوراک، صحت مند پنجاب'' کامیاب بنانے کے لیے ہر ممکن قدم اٹھا رہے ہیں۔معیاری پھلوں کی فراہمی اور مضر صحت اشیاء کی روک تھام کیلئے ہر ممکن اقدامات کیے جائیں گے۔  پنجاب فوڈا تھارٹی نے مضر صحت کیمیکلز سے پھلوں کو پکانے والوں کے خلاف صوبہ بھر میں کریک ڈاؤن کیا۔مضر صحت کیمیکلز کے استعمال سے تیار شدہ ایک ہزار 262 کلوآم تلف کر دیے گئے۔

موضوعات:

loading...