علیم خان کی گرفتاری کی وجہ تحریک انصاف کا اندرونی خلفشار، نیب میں یہ تو دم خم نہیں کہ مالم جبہ کی غیرجانبدارانہ تحقیقات کرے،بڑا دعویٰ کردیاگیا

  بدھ‬‮ 6 فروری‬‮ 2019  |  22:49

اسلام آباد(آن لائن ) پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما سعید غنی نے علیم خان کی گرفتاری کو پی ٹی آئی کا اندرونی خلفشار قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ نیب میں یہ تو دم خم نہیں کہ مالم جبہ کی غیرجانبدارانہ تحقیقات کریں کیونکہ ان کے اصل بینیفیشری عمران کان ہیں اور نہ ہی علیمہ خان کے خلاف تحقیقات کرنے کا حوصلہ ہے۔ جس نے چندہ چوری کرکے بیرون ملک جائیدادیں خریدیں۔ سعید غنی نے کہا کہ جہانگیر ترین کے خلاف تحقیقات کیوں نہیں ہوتیں۔ پرویز خٹک، فیصل واوڈا، زلفی بخاری، فہمیدہ مرزا اور کے پی کے کے وزراء4 کیسے محفوظ


ہیں۔ سعید غنی نے کہا کہ کرپشن کیسوں کی اگر واقعی غیرجانبدارانہ تحقیقات ہوئیں تو آدھی پی ٹی آئی جیل میں ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ پنجاب کی کی کرسی عثمان بزدارکے لئے محفوظ رکھنے کے لئے علیم خان کو قربانی کا بکرا بنایا گیا ہے۔ سعید غنی نے کہا کہ کٹھ پتلی حکومت ہر روز نئے ڈرامے کرکے عوام کی توجہ اصل مسائل سے ہٹانے کی کوشش کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ گیس کی قیمتوں میں ظالمانہ اضافہ اور پٹرول قیمت میں لیوی میں اضافہ عوام کی جیبوں پر بہت بڑا ڈاکہ ہے۔ سعید غنی نے ایک بار پھر اپنے اس مطالبے کو دہرایا کہ شوکت خانم ٹرسٹ اور نمل میانوالی کے فنڈز کا فرانزک آڈٹ کرایا جائے۔  پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما سعید غنی نے علیم خان کی گرفتاری کو پی ٹی آئی کا اندرونی خلفشار قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ نیب میں یہ تو دم خم نہیں کہ مالم جبہ کی غیرجانبدارانہ تحقیقات کریں کیونکہ ان کے اصل بینیفیشری عمران کان ہیں اور نہ ہی علیمہ خان کے خلاف تحقیقات کرنے کا حوصلہ ہے۔ جس نے چندہ چوری کرکے بیرون ملک جائیدادیں خریدیں۔ سعید غنی نے کہا کہ جہانگیر ترین کے خلاف تحقیقات کیوں نہیں ہوتیں۔ پرویز خٹک، فیصل واوڈا، زلفی بخاری، فہمیدہ مرزا اور کے پی کے کے وزراء4 کیسے محفوظ ہیں۔

موضوعات:

loading...