گیلانی کتنے اضافی ووٹوں سے کامیاب ہونگے؟ اپوزیشن کے دعوے نے حکومتی ایوانوں میں ہلچل مچا دی

  اتوار‬‮ 28 فروری‬‮ 2021  |  10:13

شیخوپورہ (آن لائن)چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی و پاکستان مسلم لیگ (ن) کے مرکزی سینئر رہنما رانا تنویر حسین ایم این اے نے امید ظاہر کی ہے کہ پی ڈی ایم کے امیدوار یوسف رضا گیلانی 6ایڈیشنل ووٹوں کے ساتھ سینیٹ انتخابات میں کامیابی حاصل کریں گے، ضمنی انتخابات میں نواز لیگ کی کامیابی اور حمزہ شہباز شریف کی رہائی سے مسلم لیگ (ن) کےاچھے اور حکومت کے برے دن شروع ہوگئے ہیں کامیابیوں کا یہ سفر اب حکومت کے خاتمہ تک جاری رہے گا، بھارت کو بار بار مذاکرات کی دعوت دراصل حکومت کی ناکام خارجہ پالیسی کا منہ بولتا


ثبوت ہے اگر حکومتی اقدامات میں دم خم ہوتا تو بھارت کب کا مذاکرات کی میز پر آچکا ہوتا، وزیر اعظم عمران خان کی ناکام حکومت کی وجہ سے پاکستان کو ناقابل تلافی نقصان ہورہا ہے جس کا اب ملک مزید متحمل نہیں ہوسکتا اسی لئے ان کا اقتدار سے رخصت ہونا ضروری ہوگیا ہے،ان خیالات کا اظہار انہوں نے سابق ایم این اے چوہدری محمد سعید ورک کے بھائی جاوید اقبال ورک اور سابق صدر پریس کلب جاوید معراج کے والد حاجی معراج دین کے انتقال پر تعزیت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، اس موقع پر نواز لیگ کے ڈویڑنل جنرل سیکرٹری پیر سید اشرف رسول ایم پی اے، سابق ممبر ضلع کونسل حاجی طارق محمود ڈوگر، نواز لیگ کے ضلعی سینئر نائب صدر رانا خلیل احمد گادی اور دیگر موجود تھے، راناتنویر حسین ایم این اے نے کہا کہ ملک پر موجودہ مشکل حالات موجودہ حکومت ہی کے پیدا کردہ ہیں ان کے فیصلوں سے ایک طرف ملکی سلامتی کو خطرات لاحق ہورہے ہیں تو دوسری طرف عوام کے مسائل میں ہوشربائ اضافہ ہورہا ہے، انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کی طرف سےالیکشن کمیشن کے فیصلے کو چیلنج کرنے کا اعلان اس بات کا ثبوت ہے کہ انہوں نے ڈسکہ کے ضمنی الیکشن میں عوام کے ووٹ چوری کئے، وزیر اعظم بار بار جھوٹ بولنے پر یہ جھوٹ بولنے کے ورلڈ کپ کے حقدار ہیں، قوم سے کئے گئے کسی ایک وعدہ کو پورا نہ کرپانا اور ہر ناکامی ونااہلی کو چھپانے کیلئے ماضی کی حکومتوں کو موردالزام ٹھہرانا حکمرانوں کا وطیرہ بن چکا ہے، انہوں نے کہا کہ پاکستان کا گرے لسٹ سے باہر نہ نکلنا بھی حکومت کی ناقص اور غیر سنجیدہ پالیسیوں کا نتیجہ ہے، نواز شریف کے دور میں پاکستان بلیک لسٹ سے گرے لسٹ میں آگیا تھا اگر نواز شریف کو مزید وقت ملتا تو آج پاکستان گرے لسٹ سے بھی باہر نکل چکا ہوتا۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

12ہزار درد مندوں کی تلاش

ارشاد احمد حقانی (مرحوم)’’ ریڈ فائونڈیشن‘‘ کا پہلا تعارف تھے‘ حقانی صاحب سینئر صحافی تھے‘ سیاسی کالم لکھتے تھے اور یہ اپنے زمانے میں انتہائی مشہور اور معتبر تھے‘ میری عمر کے زیادہ تر صحافی ان کی تحریریں پڑھ کر جوان ہوئے اور صحافت میں آئے‘ حقانی صاحب ہر رمضان میں چند قومی این جی اوز اور خیر کا کام ....مزید پڑھئے‎

ارشاد احمد حقانی (مرحوم)’’ ریڈ فائونڈیشن‘‘ کا پہلا تعارف تھے‘ حقانی صاحب سینئر صحافی تھے‘ سیاسی کالم لکھتے تھے اور یہ اپنے زمانے میں انتہائی مشہور اور معتبر تھے‘ میری عمر کے زیادہ تر صحافی ان کی تحریریں پڑھ کر جوان ہوئے اور صحافت میں آئے‘ حقانی صاحب ہر رمضان میں چند قومی این جی اوز اور خیر کا کام ....مزید پڑھئے‎