بھارتی فوج کی ایل اوسی پر بلااشتعال فائرنگ، پاک فوج کی بھرپور جوابی کارروائی، ایک جوان شہید

  جمعرات‬‮ 14 جنوری‬‮ 2021  |  18:07

راولپنڈی(آن لائن) بھارتی فوج نے لائن آف کنٹرول کے نزدیکی دیوا سیکٹر میں سیز فائر کی خلاف ورزی کرتے ہوئے بلااشتعال فائرنگ کی جس کے نتیجے میں پاک فوج کا سپاہی نبیل لیاقت شہید ہو گیا۔ آئی ایس پی آر کے مطابق بھارتی فوج کی لائن آف کنٹرول پر اشتعال انگزیوں کا سلسلہ جاری ہے۔ گزشتہ روز ایل او سی کے نزدیکی دیواسیکٹر پر بھارتی فوج کی جانب سے بلااشتعال سیز فائر کی خلاف ورزی کی گئی۔ پاک فوج نے فوری اور موثر جوابی کارروائی کی جس میں بھارتی فورسز کو بھاری جانی و مالی نقصان اٹھانا پڑا۔ فائرنگ کے


تبادلے میں پاک فوج کا 28 سالہ سپاہی نبیل لیاقت شہید ہو گیا۔ نیبل لیاقت گوجر خان کا رہائشی ہے جس نے بھارتی فوج کی اشتعال انگزیوں کے خلاف وطن کی خاطر مردانہ وار مقابلہ کرتے ہوئے جان قربان کی۔دوسری جانب برطانیہ نے بھارت پر زوردیا ہے کہ وہ اپنے غیر قانونی زیر تسلط جموں وکشمیرمیں عائد تمام پابندیاں ختم کرے اوروہاں کی زمینی صورتحال کا جائزہ لینے کیلئے دلی میں برطانوی ہائی کمیشن کی ایک ٹیم کو مقبوضہ وادی کا دورہ کرنے کی اجازت دے۔کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق یہ مطالبہ برطانیہ کے وزیر انصاف رابرٹ بکلینڈ نے ویسٹ منسٹر ہال میں جموں وکشمیر کی سیاسی صورتحال کے بارے میں ایک مباحثے میں ارکان پارلیمنٹ کے سوالوں کا جواب دیتے ہوئے کیا۔یہ مباحثہ برطانوی اراکن پارلیمنٹ کی طرف سے بھارت میں مسلمانوں، عیسائیوں اور دیگر اقلیتی گروپوں پرمظالم پر تفصیلی غور و خوص کے ایک دن بعد منعقد ہوا۔ گزشتہ ہفتے برطانوی ارکان پارلیمنٹ نے بھارت میں نئے متنازعہ زرعی قوانین کی منسوخی کیلئے لابنگ کی تھی۔ رابرٹ بکلینڈ نے کہا کہ برطانوی وزیراعظم بورس جانسن علاقائی کشیدگی دور کرنے، کنٹرول لائن پر جنگ بندی، تعلقات میں بہتری اور ضبط و تحمل کا مظاہر ہ کرنے کی غرض سے اپنے بھارتی اور پاکستانی ہم منصوبوں کے سا تھ رابطے میں ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہم مسلسل بھارت کوانسانی حقوق کی پامالیوں سے متعلق اپنی تشویش سے آگاہ کر رہے ہیں اور مقبوضہ علاقے میںتمام پابندیوں کو جلد از جلد ختم کرنے پر زوردے رہے ہیں۔ برطانیہ کے خارجہ، دولت مشترکہ اور ترقیاتی دفتر (ایف سی ڈی او) کے وزیر نائیجل ایڈمس نے اس موقع پر کہاکہ ہمیں یقین ہے کہ بھارت اور پاکستان کشمیری عوام کی خواہشات کو مدنظر رکھتے ہوئے تنازعہ کشمیر کا کوئی پائیدار سیاسی حل تلاش کرلیں گے۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

آخری موو

سینیٹ کا الیکشن کل اور پلاسی کی جنگ 23 جون 1757ءکو ہوئی اور دونوںنے تاریخ پر اپناگہرا نقش چھوڑا‘ بنگال ہندوستان کی سب سے بڑی اور امیر ریاست تھی‘پورا جنوبی ہندوستان نواب آف بنگال کی کمان میں تھا‘ سراج الدولہ بنگال کا حکمران تھا‘ دوسری طرف لارڈ رابرٹ کلائیو کمپنی سرکار کی فوج کا کمانڈر تھا‘ انگریز کے ....مزید پڑھئے‎

سینیٹ کا الیکشن کل اور پلاسی کی جنگ 23 جون 1757ءکو ہوئی اور دونوںنے تاریخ پر اپناگہرا نقش چھوڑا‘ بنگال ہندوستان کی سب سے بڑی اور امیر ریاست تھی‘پورا جنوبی ہندوستان نواب آف بنگال کی کمان میں تھا‘ سراج الدولہ بنگال کا حکمران تھا‘ دوسری طرف لارڈ رابرٹ کلائیو کمپنی سرکار کی فوج کا کمانڈر تھا‘ انگریز کے ....مزید پڑھئے‎