میری نااہلی نواز شریف کے فیصلے کو بیلنس کرنے کیلئے کی کروائی گئی ،مجھے نااہل کروانے میں کس نے اپنا کردار ادا کیا؟ جہانگیر ترین نے تہلکہ خیز کر دیئے انکشافات

  جمعہ‬‮ 22 مئی‬‮‬‮ 2020  |  11:49

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک )مجھے نااہل کروانے کی وجہ کوئی اور نہیں بلکہ نواز شریف کے فیصلے کو بیلنس کرنا تھا ۔ تفصیلات کے مطابق جہانگیرترین نے نجی ٹی وی پرگروام میں گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ میری نااہلی کا تو کوئی جواز ہی نہیں بنتا تھا ، مجھے جان بوجھ کر نااہل کروایا گیا تاکہ نواز شریف کے فیصلے کوبیلنس کیا جا سکے ۔، میرے اثاثے ڈیکلئیر تھے ، منی ٹریل موجود تھی ،میرے سارے اثاثے میرے بچوں کے نام پر تھے ۔ ان کا کہنا تھا کہ میں اگر نواز شریف کیخلاف بڑھ چڑھ کر لڑتا تو شاید میں


نااہل نہ ہوتا ، میرے خلاف انہوں نے پٹیشن تک نہیں کرنی ۔ صحافی نے سوال کرتے ہوئے پوچھا کہ آپ کو کسی نے نہیں بتایا کہ آپ کی نااہلی نواز شریف کے فیصلے کو بیلنس کرنے کیلئے کی گئی ، جس کے جواب میں جہانگیر ترین کا کہنا تھا کہ ہر شخص کی زبان پر یہی الفاظ تھے ، ڈان نےبہت بڑی ہیڈلائن دی بیلنسنگ ایکٹ دی تھی ۔ جہانگیر ترین کو نا اہل کروانے میں کس نے کردار ادا کیا ؟اس میں اس وقت کے چیف جسٹس کا رول کرنا تھا۔ یہ کوئی سودا بازی تو نہیں ہورہی تھی، اگر دونوں کے خلاف کچھ نہیں تھا تو پٹیشن خارج کردینی چاہئے تھی ۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

یہ تو کچھ بھی نہیں

وہ ہر چیز‘ ہر حادثے‘ ہر پریشانی اور ہر مسئلے کو معمولی سمجھتے تھے اور ہمیشہ ’’ یہ تو کچھ بھی نہیں‘‘ کہہ کر ٹال دیتے تھے‘ میں انہیں ’’ انکل یہ تو کچھ بھی نہیں‘‘ کہتا تھا‘ یہ ان کا ’’نک نیم‘‘ تھا‘ میں نے ان کے منہ سے یہ فقرہ پہلی ملاقات میں سنا تھا‘ میں انہیں ائیر ....مزید پڑھئے‎

وہ ہر چیز‘ ہر حادثے‘ ہر پریشانی اور ہر مسئلے کو معمولی سمجھتے تھے اور ہمیشہ ’’ یہ تو کچھ بھی نہیں‘‘ کہہ کر ٹال دیتے تھے‘ میں انہیں ’’ انکل یہ تو کچھ بھی نہیں‘‘ کہتا تھا‘ یہ ان کا ’’نک نیم‘‘ تھا‘ میں نے ان کے منہ سے یہ فقرہ پہلی ملاقات میں سنا تھا‘ میں انہیں ائیر ....مزید پڑھئے‎