کورونا کی شکار مریضہ سے ہسپتال ملازم کی زیادتی متاثرہ مریضہ 24 گھنٹے بعد ہی دم توڑ گئی

  اتوار‬‮ 16 مئی‬‮‬‮ 2021  |  10:52

مدھیہ پردیش (این این آئی)ریاست مدھیہ پردیش کے ایک سرکاری ہسپتال میں گزشتہ ماہ کووڈ کی ایک مریضہ کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا، جس کے بعد ان کی موت واقع ہو گئی۔ حکام نے ایک ماہ تک اس واقعے کو چھپائے رکھا۔بھارتی ریاست مدھیہ پردیش میں بھوپال میموریل ہاسپیٹل اینڈ ریسرچ سینٹر (بی ایم ایچ آر سی)کے حکام نے جنسی زیادتی کے چوبیس گھنٹے کے اندر ہی ایک کووڈ مریضہ کی موت کے واقعے اور ملزم کی گرفتاری کے تقریباً ایک ماہ سے زیادہ عرصہ گزر جانے کے بعد اب جا کر اس انسانیت سوز واقعے کا اعتراف


کیا ہے۔پولیس کے مطابق کووڈ انیس سے متاثرہ ایک 43 سالہ خاتون کو گزشتہ چھ اپریل کو بی ایم ایچ آر سی میں داخل کرایا گیا تھا۔ انہوں نے ایک وارڈ بوائے کے ذریعہ جنسی زیادتی کے بارے میں ہسپتال کی انتظامیہ کو شکایت کی اور ملزم کی شناخت بھی کرلی۔پولیس کے مطابق جنسی زیادتی کا شکار ہونے کے بعدمریضہ کی حالت بگڑ گئی اور انہیں وینٹی لیٹر پر منتقل کرنا پڑا لیکن چند گھنٹوں کے اندر کی ان کی موت ہو گئی۔سینیئر پولیس افسر ارشاد ولی کے مطابق متاثرہ خاتون کی شکایت کی بنیاد پر پولیس نے معاملہ درج کرکے ملزم سنتوش اہیروار نامی وارڈ بوائے کو گرفتار کر لیا۔ وہ فی الحال بھوپال سینٹرل جیل میں ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ سنتوش اہیروار پر پہلے بھی ایک 24 سالہ نرس کے ساتھ جنسی زیادتی کا الزام ہے اور اس کے لیے اسے کچھ دنوں کے لیے ملازمت سے معطل بھی کر دیا گیا تھا۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

پہلے جنم کے پانچ ساتھی

میں نے چند برس قبل حیات بعد ازمرگ پر کالم لکھا تھا‘ وہ عام سی فضول تحریر تھی‘ لوگوں نے اسے یاوہ گوئی سمجھ کر اگنور کر دیا لیکن وہ پڑھ کر میڈیکل کالج کی ایک سٹوڈنٹ نے مجھ سے رابطہ کیا اور بتایا ’’مجھے بچپن سے خواب آتے ہیں‘ میرا بڑا سا گھر ‘ ایک جوان بیٹا اور بہو ....مزید پڑھئے‎

میں نے چند برس قبل حیات بعد ازمرگ پر کالم لکھا تھا‘ وہ عام سی فضول تحریر تھی‘ لوگوں نے اسے یاوہ گوئی سمجھ کر اگنور کر دیا لیکن وہ پڑھ کر میڈیکل کالج کی ایک سٹوڈنٹ نے مجھ سے رابطہ کیا اور بتایا ’’مجھے بچپن سے خواب آتے ہیں‘ میرا بڑا سا گھر ‘ ایک جوان بیٹا اور بہو ....مزید پڑھئے‎