ہفتہ‬‮ ، 15 جون‬‮ 2024 

بیوروکریسی حکومت کے غیر قانونی حکم کو تسلیم کرنے سے انکار کردے،صدر مملکت ممنون حسین

datetime 30  اکتوبر‬‮  2014
ہمارا واٹس ایپ چینل جوائن کریں

اسلام آباد۔۔۔۔ صدر مملکت ممنون حسین نے کہا ہے کہ بیوروکریسی ایک تربیت یافتہ انتظامیہ کی حیثیت سے عوامی مسائل کے حل کے عمل میں تیزی لائے اور کسی بھی حکومت کے کسی غیر قانونی حکم کو تسلیم کرنے سے انکار کردے۔اسلام آباد میں نیشنل مینجمنٹ کورس کے شرکاء سے خطاب اور شرکا کے سوالات کا جواب دیتے ہوئے صدر مملکت نے کہا کہ یہ ہماری قومی بدقسمتی رہی ہے کہ زندگی کے ہر شعبے میں تنزل اور انحطاط پیدا ہوا ہے جس سے بیورو کریسی بھی متاثر ہوئے بغیر نہیں رہ سکی، طے شدہ راستے سے ہٹنے کی وجہ سے ملک میں لاقانونیت اور کرپشن کوفروغ ملا اور عدلیہ کمزور ہوئی، اگر ملک میں پیدا ہونے والے انتظامی مسائل کو بروقت حل نہ کیا جائے تو وہ سیاسی نوعیت اختیار کرجاتے ہیں، جس سے ریاستیں شکست و ریخت کا شکار ہوجاتی ہیں۔ اس لئے ضروری ہے کہ بیوروکریسی ایک تربیت یافتہ انتظامیہ کی حیثیت سے عوامی مسائل کے حل کے عمل میں تیزی پیدا کرے اور خود کو مضبوط بناتے ہوئے کسی بھی حکومت کے کسی غیر قانونی حکم کو تسلیم کرنے سے انکار کردے لیکن اس عمل میں شدت اور تلخی سے بچنے کی پوری کوشش کی جائے تاکہ تصادم کی صورت حال کسی بھی صورت میں پیدا نہ ہو۔
صدر مملکت نے کہا کہ ماضی میں سیاست کو معیشت پر فوقیت حاصل تھی لیکن اب معیشت نے سیاست پر فوقیت حاصل کرلی ہے۔ آج کی دنیا میں ان ملکوں کی سیاست میں استحکام پیدا ہوتا ہے جہاں معیشت مضبوط ہوتی ہے۔ اس لیے ضروری ہے کہ ملک کی معیشت کے استحکام کے لیے سنجیدگی سے کام کیا جائے۔ ملک میں امن و امان کے مسائل ہیں، بدامنی کے مکمل خاتمے تک فوجی آپریشن جاری رہے گا، بلوچستان کے مسائل کی بنیادی وجہ احساس محرومی ہے جس کی ذمہ دار ماضی کی حکومتیں بھی رہیں لیکن ان کے ساتھ ساتھ وہاں کے قبائلی سرداروں کو بھی اس سے بری الذمہ قرار نہیں دیا جاسکتا۔ بلوچستان کی ترقی کے لئے عوامی نمائندوں کو جو فنڈ فراہم کئے جاتے رہے ہیں، انھیں عوام پر خرچ کرنے کی بجائے خرد برد کردیا جاتا رہا ہے۔ اکبر بگٹی کے قتل سے ملک کے استحکام اور یک جہتی کو سخت نقصان پہنچا۔ موجودہ حکومت نے بلوچستان میں اپنی جماعت کی اکثریت ہونے کے باوجود وہاں قوم پرست جماعتوں کی حکومت قائم کی۔ اس کے نتیجے میں بلوچستان میں حالات بہتر ہوئے ہیں۔



کالم



شرطوں کی نذر ہوتے بچے


شاہ محمد کی عمر صرف گیارہ سال تھی‘ وہ کراچی کے…

یونیورسٹیوں کی کیا ضرروت ہے؟

پورڈو (Purdue) امریکی ریاست انڈیانا کا چھوٹا سا قصبہ…

کھوپڑیوں کے مینار

1750ء تک فرانس میں صنعت کاروں‘ تاجروں اور بیوپاریوں…

سنگ دِل محبوب

بابر اعوان ملک کے نام ور وکیل‘ سیاست دان اور…

ہم بھی

پہلے دن بجلی بند ہو گئی‘ نیشنل گرڈ ٹرپ کر گیا…

صرف ایک زبان سے

میرے پاس چند دن قبل جرمنی سے ایک صاحب تشریف لائے‘…

آل مجاہد کالونی

یہ آج سے چھ سال پرانی بات ہے‘ میرے ایک دوست کسی…

ٹینگ ٹانگ

مجھے چند دن قبل کسی دوست نے لاہور کے ایک پاگل…

ایک نئی طرز کا فراڈ

عرفان صاحب میرے پرانے دوست ہیں‘ یہ کراچی میں…

فرح گوگی بھی لے لیں

میں آپ کو ایک مثال دیتا ہوں‘ فرض کریں آپ ایک بڑے…

آئوٹ آف دی باکس

کان پور بھارتی ریاست اترپردیش کا بڑا نڈسٹریل…