پانچ سال کے لئے  قمری کیلینڈر تیار،عید الفطر کس دن اور کس تاریخ کو ہوگی؟حکومت نے قبل از وقت اعلان کردیا

  پیر‬‮ 20 مئی‬‮‬‮ 2019  |  23:36

اسلام آباد(آن لائن) وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے کہا ہے کہ پانچ سال کے لئے  قمری کیلینڈر تیار کر لیا ہے عید الفطر بدھ 5  جون  کو ہو گی۔ جدید ٹیکنالوجی سے استفادہ حاصل کرنا چاہئے پرانی دور بین سے چاند دیکھنا جائز جبکہ جدید ٹیکنالوجی سے چاند نہ دیکھنے  کی علماء کی منطق سمجھ سے بالا تر ہے ریاست کے اندر ریاست بنانے کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔ انسانی آنکھ سے چاند دیکھنا اتنا ہی ضروری ہو تو ہر گلی، محلے اور شہر  کی اپنی اپنی عید ہو گیملائیشیا، برونائی اور ترکی جیسے اسلامی ممالک


قمری کیلینڈر  کے مطابق محرم، رمضان اور عیدین کا فیصلہ کرتے ہیں۔ پیر کے روز نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا ہے کہ  چاند کی رویت کے حوالے سے دہائیوں سے جاری تنازع  کو ہمیشہ کے لئے ختم کرنے کے لئے وزارت سائنس و ٹیکنالوجی نے قمری کیلینڈر تیار کر لیا ہے ہمارے پیارے نبی حضرت محمدؐ کا ارشاد ہے کہ مسلمان علم کی قوم ہے اور تحقیق کی قوم ہے اس لئے ٹیکنالوجی اور علم سے استفادہ حاصل کرنا ہم سب کا فرض ہے قمری کیلینڈر کی تیاری میں خلائی تحقیقاتی ادارے سپارکو، محکمہ موسمیات اور وزرات سائنس و ٹیکنالوجی کی سائنس دانوں نے حصہ  لیا اور نہایت محنت اور عرق پریزی  کے ساتھ تمام پہلوؤں کو سامنے رکھ کر کیلینڈر مکمل کیا ہے  انہوں نے کہا کہ 5 سال کی مدت رکھنا ضروری نہیں تھا  تا ہم جدید ٹیکنالوجی  کے آمد کے پیش نظر پانچ سال بعد دوبارہ جائزہ لینے کا فیصلہ کیا ہے انہوں نے کہا کہ چاند کی رویت کے حوالے سے اسلامی نقطہ نظر میں دو رائے  پائی جاتی ہیں امام احمد بن حنبلؒ کے مطابق چاند کا انسانی آنکھ سے نظرآ نا ضروری ہے اور عالم اسلام میں کسی جگہ پر بھی چاند نظر آ جائے تو پورے عالم اسلام میں عید ہو گی جبکہ امام شافعیؒ کے مطابق یہ قطعی طور پر سائنسی معاملہ ہے اور سائنسی طریقے سے ہی چاند کی رویت کا فیصلہ ہو نا چاہئے فوا دچوہدری نے کہا کہ علماء کی یہ منطق سمجھ سے بالا تر ہے کہ پرانی دور بین سے چاند دیکھنا جائز  جبکہ جدید ٹیکنالوجی سے دیکھنا ناجائز ہےاسی لئے کیلینڈر اسلامی نظریاتی کونسل کو بھجوا دیا ہے اور چاند کی پیدائش کے حوالے سے پوار سائنسی طریقہ کار بھی واضح کیا ہے انہوں نے کہا کہ اگر انسانی آنکھ سے چاند دیکھنا اتنا ہی ضروری ہو ہر گلی، محلے اور شہر کی اپنی اپنی عید ہونی چاہئے اس صورت میں ایک عید ہو ہی نہیں سکتی ریاست کے اندر ریاست بنانے کی اجازت نہیں دی جا سکتی سائنسی طریقے سے چاند کی رویت کا اعلان کرنا ریاست کا اختیار ہونا چاہئے اس دیرینہ مسئلے کے حل کے لئے عوام کی دلچسپی بہت حوصلہ افزاء ہے انہوں نے کہا کہ ملائیشیا، برونائی اور ترقی جیسے مسلم ممالک اب قمری کیلینڈر کے مطابق ہی  محرم، رمضان اور عید کا فیصلہ کرتے ہیں۔

موضوعات:

loading...