17 سالہ لڑکی کاری قرار دے کر باپ اور ماموں کے ہاتھوں قتل،لڑکی کے گھر چھوڑنے پر پر ورثاء آمنہ کو برادری کے طور پر واپس گھر لے آئے تھے،افسوسناک انکشافات

  منگل‬‮ 13 مارچ‬‮ 2018  |  22:39

رحیم یار خان (این این آئی)رحیم یار خان کے علاقے چک 4 کی رہائشی 17 سالہ لڑکی کو باپ اور ماموں نے کاری قرار دے کر گلا دبا کرقتل کرنے کے بعد تیزدھار آلہ سے شہ رگ بھی کاٹ ڈالی ٗملزمان نے 17 سالہ لڑکی کو قتل کرنے کے بعد موقع سے فرار ہوگئے ٗپولیس نے نعش تحویل میں لے کر پوسٹ مارٹم کے بعد تدفین کیلئے ورثاء کے حوالے کردی۔ذرائع کے مطابق چک 4 این پی کی رہائشی 17 سالہ آمنہ چند روز قبل کوٹ سمابہ کے رہائشیآشنا فیاض احمد کے ہمراہ گھر سے بھاگ گئی تھی۔لڑکی کے گھر

چھوڑنے پر پر ورثاء آمنہ کو برادری کے طور پر واپس گھر لے آئے تھے۔گزشتہ روز مقتولہ کے ماموں محمد بخش اور والد امام بخش نے گھر سے بھاگ جانے کی رنجش پر آمنہ کو کاری قرار دے کر پہلے گلا دبا کر موت کے گھاٹ اتاردیا اور بعد ازاں تیز دھار آلہ سے اس کی شہ رگ بھی کاٹ ڈالی ٗملزمان ماموں اور باپ آلہ قتل سمیت موقع سے فرارہوگئے۔اطلاع ملنے پر پولیس نے موقع پر پہنچ کر مقتولہ کی نعش قبضہ میں لے کر پوسٹ مارٹم کے بعد تدفین کیلئے ورثاء کے حوالے کردی ٗپولیس نے فرار ملزمان کی تلاش شروع کردی۔

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں