ڈیفنس لاہور میں ہونے والا دھماکہ باردودی نہیں گیس سلنڈر کا تھا۔سی ٹی ڈی کی رپورٹ

  جمعہ‬‮ 24 فروری‬‮ 2017  |  10:21

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک )ڈیفنس لاہور میں ہونے والا دھماکہ باردودی نہیں گیس سلنڈر کا تھا۔سی ٹی ڈی کی رپورٹ کیمطابق حکومت پنجاب کی ابتدائی تحقیقات سچ ثابت ہوئیںسلنڈر پھٹنے کی خبر کو غلط رنگ دے کر خوف و ہراس پھیلانے میں دشمن عناصر ناکامترجمان سی ٹی ڈی کی رپورٹ کے مطابق ڈیفنس دھماکے کو اتفاقیہ حادثہ قرار دیا گیا ہے جو کہ گیس لیکیج کے باعث سلنڈر پھٹنے سے ہوا۔سی ٹی ڈی کی رپورٹ حکومت

 

پنجاب کی ابتدائی تحقیقات کی تائید کرتی ہے جس میں میڈیا کو آگاہ کیا گیا تھا کہ دھماکہ کسی تخریب کاری کے نتیجہ نہیں بلکہ گیس لیکیج کے باعث درپیش آیاہے۔دھماکے میں زخمی ہونے والوں کے بیانات ریکارڈ کرتے ہوئے ریسٹورینٹ کے ویٹرعدنان نے انکشاف کیا کہ ریسٹورینٹ میں گیس کے 5 سلنڈرز رکھے گئے تھے،جن کو گزشتہ رات اوپر والی منزل سے سلنڈروں کو نیچے لاکررکھا گیا تھا جب کہ گیس کی بدبو سے مینجمنٹ کو بھی آگاہ کر دیا گیا تھا۔ عدنان کا کہنا تھا کہ بھائی آصف نے سگریٹ جلانے کے لیے ماچس جلائی جس کے بعد دھماکا ہوا جس میں آصف جاں بحق ہوگیا۔ ترجمان سی ٹی ڈی نے بھی تصدیق کی ہے کہ بلڈنگ میں دھماکا گیس سلنڈروں کاہی تھا کیونکہ گزشتہ رات 45 کلو کے 5 سلنڈر متاثرہ عمارت میں آئے تھے جب کہ تحقیقات میں دھماکے میں بارودی مواد کے کوئی شواہد نہیں ملے ہیں۔واضح رہے کہ لاہور کے علاقے ڈیفنس کے زیڈ بلاک کی زیر تعمیر عمارت میں آج ہونے والے دھماکے میں 9 افراد جاں بحق اور 30 زخمی ہوئے جبکہ دوسری طرف پولیس نے لاہور کے علاقے ڈیفنس بلاک زیڈ میں ہونے والے دھماکے کا مقدمہ ڈیفنس اے پولیس اسٹیشن میں بھی درج ہو چکا ہے۔

 

unnamed

unnamed (1)

 



موضوعات:

زیرو پوائنٹ

قیروان شہر میں چند گھنٹے

قیروان تیونس شہر سے دو گھنٹے کی ڈرائیو پر واقع ہے‘ شہر کی بنیاد حضرت عثمان غنیؓ کے دور میں عقبہ بن نافع نے رکھی اور یہ شمالی افریقہ میں مسلمانوں کا پہلا شہربن گیا‘ اس مقام کا انتخاب صحابی رسول حضرت ابوزمان البالوئی ؓ(Balaoui) نے کیا تھا‘ آپؓ 654ء میں یہاں تشریف لائے اور بربر قبائل کو دعوت اسلام ....مزید پڑھئے‎

قیروان تیونس شہر سے دو گھنٹے کی ڈرائیو پر واقع ہے‘ شہر کی بنیاد حضرت عثمان غنیؓ کے دور میں عقبہ بن نافع نے رکھی اور یہ شمالی افریقہ میں مسلمانوں کا پہلا شہربن گیا‘ اس مقام کا انتخاب صحابی رسول حضرت ابوزمان البالوئی ؓ(Balaoui) نے کیا تھا‘ آپؓ 654ء میں یہاں تشریف لائے اور بربر قبائل کو دعوت اسلام ....مزید پڑھئے‎