افغان معیشت بچانے کیلئے افغانستان کے منجمد اثاثے بحال کرنیکی ضرورت ہے، عارف علوی

  اتوار‬‮ 28 ‬‮نومبر‬‮ 2021  |  10:00

اشک آباد ( آن لائن ) صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ افغان معیشت بچانے کیلئے افغانستان کے منجمد اثاثے بحال کرنیکی ضرورت ہے، افغانستان میں امن و مفاہمت اور استحکام کیلئے مل کر کام کرنے کی اشد ضرورت ہے، افغانوں کے حقوق کا احترام ضروری تاہم افغان سرزمین کسی ملک کیخلاف استعمال نہیں ہونی چاہیے، افغانستان میں پائیدار امن خطے میں تجارت اورمعاشی مواقع فراہم کرے گا۔صدر مملکت عارف علوی 15ویں سمٹ آف اکنامک آرگنائزیشن میں شرکت کیلئے ترکمانستان میں ہیں ،تاجک صدر امام علی رحمان سے سائیڈ لائن ملاقات کے دوران دو طرفہ تعلقات مزید


مستحکم بنانے پر اتفاق کیا گیا۔صدرڈاکٹرعارف علوی نے دورہ ترکمانستان کے دوران تاجکستان کے صدر امام علی رحمان سے ملاقات کی جس کے دوران کاسا 1000 منصوبے پر عمل درآمد کا جائزہ لیا۔ پاکستان اور تاجکستان کے مابین تجارت اور سرمایہ کاری کو مزید فروغ دینے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے صدر مملکت نے کہا کہ پاکستان کی بندرگاہوں کے ذریعے تاجکستان کیلئے علاقائی انضمام اور روابط وقت کی ضرورت ہے۔ملاقات میں افغانستان میں انسانی صورتحال کی وجہ سیدرپیش چیلنجز پربھی گفتگو ہوئی۔ صدرعارف علوی نے تاجک ہم منصب کو افغانستان میں امن و استحکام کیلئے پاکستان کی کوششوں بارے آگاہ کیا اور کہا کہ افغانستان میں عدم استحکام سے ہمسایہ ممالک سب سے زیادہ متاثرہوں گے، افغان معیشت بچانے کیلئے افغانستان کے منجمد اثاثے بحال کرنیکی ضرورت ہے۔صدر مملکت نے زور دیا کہ افغانستان میں امن و مفاہمت اور استحکام کیلئے مل کر کام کرنے کی اشد ضرورت ہے، افغانوں کیحقوق کا احترام ضروری تاہم افغان سرزمین کسی ملک کیخلاف استعمال نہیں ہونی چاہیے، افغانستان میں پائیدار امن خطے میں تجارت اور معاشی مواقع فراہم کرے گا، ملاقات کے دوران دونوں رہنماؤں نے موجودہ دوطرفہ تعلقات پراطمینان کا اظہار کیا۔


زیرو پوائنٹ

برف باری

یہ پرانی مثال ہے‘ ایک چھوٹا ہوائی جہاز کسی برفانی پہاڑ پر گرگیا‘ پائلٹ مر گیا‘ جہاز میں صرف دو مسافر سوار تھے‘ وہ دونوں بچ گئے‘ اب صورت حال یہ تھی‘ ہر طرف برف ہی برف تھی اور اس برف کے درمیان دو لوگ جہاز کے ملبے میں گرے پڑے تھے‘ دور دور تک کوئی آبادی نہیں تھی‘ خوراک ....مزید پڑھئے‎

یہ پرانی مثال ہے‘ ایک چھوٹا ہوائی جہاز کسی برفانی پہاڑ پر گرگیا‘ پائلٹ مر گیا‘ جہاز میں صرف دو مسافر سوار تھے‘ وہ دونوں بچ گئے‘ اب صورت حال یہ تھی‘ ہر طرف برف ہی برف تھی اور اس برف کے درمیان دو لوگ جہاز کے ملبے میں گرے پڑے تھے‘ دور دور تک کوئی آبادی نہیں تھی‘ خوراک ....مزید پڑھئے‎