ہمارا خیال تھا خان صاحب نے جیل بھرو تحریک کا اعلان کیا ہے اب مچلکے جمع نہیں کرائیں گے ، ن لیگ

7  فروری‬‮  2023

اسلام آباد (این این آئی)معاون خصوصی برائے داخلہ و قانونی امور عطا تارڑ نے کہا ہے کہ ہمارا خیال تھا خان صاحب نے جیل بھرو تحریک کا اعلان کیا اب مچلکے جمع نہیں کرائیں گے ،جیل بھرو تحریک عدالتوں سے استثنیٰ لینے کی تحریک میں تبدیل ہوچکی ہے،ٹیرئن وائٹ کیس ایک لیگل کیس ہے،

پاکستان کا قانون کہتا ہے آپ نے بچوں کو ڈکلیئر کرنا ہے، اگر آپ بچے ڈکلیئر نہیں کئے تو آپ صادق اور امین نہیں رہے۔ منگل کو پی ٹی وی ہیڈکوارٹر میں پریس کانفرنس سے خطاب کر تے ہوئے معاون خصوصی عطا تارڈ نے کہا کہ زمان پارک کے باہر خواتین کا جو حصار ہے خان صاحب اس سے باہر نکلیں گے،کہیں گے میں کیسز کا سامنا کروں گا جس نے پکڑنا ہے پکڑ لے۔ انہوں نے کہا کہ خان صاحب جس سیاسی جدوجہد کا ڈرامہ رچاتے ہیں اس میں کوئی قید و بند کی صعوبتیں نہیں،وکلاء تحریک کے وران جب لاہور میں چھاپہ پڑنے کا ڈر تھا تو یہ دیور پھلانگ کر بھاگ گئے تھے،عمران خان ک چھپنا یا بھاگنا ہی آتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف ماڈل ٹاؤن سے گواجرانوالہ تک پہنچے عدلیہ بحال ہو چکی تھی ،عمران خان ناجانے کیوں گرفتاری سے خوف آتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ توشہ خانہ کیس میں سب سامنے ہے، آپ توشہ خانہ کیس میں کتنی دیر چھپیں گے،آپ کب تک ٹانگ کا بہانا بنائیں گے، آپ چاہتے ہیں کیسز میں تاخیر ہو،ہم نے نیب کا ٹرائل روز کی بنیاد پر بھگتا ہے،آ پ کے پاس وکلا کی ٹیم ہے جو دھوکا اور بہانے بازی کا مشورہ دیتی ہے،آج توشہ خانہ کیس تھا آپ اپنا ویڈیو لنک بیان ریکارڈ کروا دیتے۔ انہوں نے کہا کہ جھوٹ فریب اور منافقت کی انسانی شکل عمران خان ہے،منافق کی تین نشانیہ ہیں،امانت میں خیانت کی نشانی یہ توشہ خانہ کیس ہے۔ انہوں نے کہا کہ میری معزز عدالت سے گزارش ہے

عمران خان کا روزانہ کی بنیاد پر ٹرائل کیا جائے،منصف بھی ذرا کتراتے ہیں کہ یہ سوشل میڈیا پر گالیاں دیتا ہے،یہ نہیں ہوسکتا ہے کہ ملک میں انصاف کا دوہرا معیار ہے۔ انہوں نے کہا کہ محمد خان بھٹی کو گرفتار نہیں کیا گیا وہ روپوش ہے، محمد خان بھٹی کو ان لوگوں نے خود روپوش کر رکھا ہے۔



کالم



اللہ کے حوالے


سبحان کمالیہ کا رہائشی ہے اور یہ اے ایس ایف میں…

موت کی دہلیز پر

باباجی کے پاس ہر سوال کا جواب ہوتا تھا‘ ساہو…

ایران اور ایرانی معاشرہ(آخری حصہ)

ایرانی ٹیکنالوجی میں آگے ہیں‘ انہوں نے 2011ء میں…

ایران اور ایرانی معاشرہ

ایران میں پاکستان کا تاثر اچھا نہیں ‘ ہم اگر…

سعدی کے شیراز میں

حافظ شیرازی اس زمانے کے چاہت فتح علی خان تھے‘…

اصفہان میں ایک دن

اصفہان کاشان سے دو گھنٹے کی ڈرائیور پر واقع ہے‘…

کاشان کے گلابوں میں

کاشان قم سے ڈیڑھ گھنٹے کی ڈرائیو پر ہے‘ یہ سارا…

شاہ ایران کے محلات

ہم نے امام خمینی کے تین مرلے کے گھر کے بعد شاہ…

امام خمینی کے گھر میں

تہران کے مال آف ایران نے مجھے واقعی متاثر کیا…

تہران میں تین دن

تہران مشہد سے 900کلو میٹر کے فاصلے پر ہے لہٰذا…

مشہد میں دو دن (آخری حصہ)

ہم اس کے بعد حرم امام رضاؒ کی طرف نکل گئے‘ حضرت…