عورتوں کو وراثت کے شرعی حق سے محروم رکھنا قابل نفرت اور مکروہ عمل قرار، سپریم کورٹ کے جج جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے تحریری فیصلہ جاری کردیا

  ہفتہ‬‮ 20 ‬‮نومبر‬‮ 2021  |  16:59

اسلام آباد (این این آئی)سپریم کورٹ آف پاکستان نے خواتین کی وراثت سے متعلق تحریری فیصلہ جاری کر دیا جس میں مردوں کی جانب سے عورتوں کو وراثت کے شرعی حق سے محروم رکھنا قابلِ نفرت اور مکروہ عمل قرار دیا گیا ہے۔

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے یہ فیصلہ تحریر کیا ،عدالت عظمیٰ کی جانب سے مردوں کی جانب سے عورتوں کو وراثت کے شرعی حق سے محروم رکھنا قابلِ نفرت اور مکروہ عمل قرار دیا گیا ہے۔سپریم کورٹ آف پاکستان کا اپنے تحریری فیصلے میں کہنا ہے کہ مردوں کا خواتین کو شرعی وراثتی حق سے محروم رکھنا مکروہ عمل ہے۔عدالت نے کہا کہ خواتین کو شرعی وراثت سے محروم کرنا اللّٰہ تعالیٰ کے حکم کی خلاف ورزی ہے۔تحریری فیصلے میں عدالتِ عظمیٰ نے کہا کہ فراڈ اور دیگر حربوں سے خواتین کو شرعی وراثت سے محروم رکھنا عام ہے۔سپریم کورٹ آف پاکستان کا اپنے تحریری فیصلے میں کہنا ہے کہ خواتین کے لیے وراثت سے محرومی تکلیف کا باعث بنتی ہے۔تحریری فیصلے میں عدالتِ عظمیٰ نے کہا کہ ملک میں ہر دن مرد وارث خاتون وارث کو حق سے محروم کرتے ہیں۔



موضوعات:

زیرو پوائنٹ

کیا مریم نواز خاتون نہیں؟

آج سے چند برس قبل اسلام آباد ائیرپورٹ پر ایک حیران کن واقعہ پیش آیا‘ برطانیہ جانے والی ایک فیملی نے امیگریشن کی فی میل سٹاف سے بدتمیزی کی‘ بدتمیزی کرنے اور بھگتنے والی دونوں خواتین تھیں‘ بات بڑھتے بڑھتے گالی گلوچ اور ہاتھا پائی تک چلی گئی‘ پہلا تھپڑ مسافر خاتون نے مارا‘جواب میں امیگریشن کی خاتون نے بھی ....مزید پڑھئے‎

آج سے چند برس قبل اسلام آباد ائیرپورٹ پر ایک حیران کن واقعہ پیش آیا‘ برطانیہ جانے والی ایک فیملی نے امیگریشن کی فی میل سٹاف سے بدتمیزی کی‘ بدتمیزی کرنے اور بھگتنے والی دونوں خواتین تھیں‘ بات بڑھتے بڑھتے گالی گلوچ اور ہاتھا پائی تک چلی گئی‘ پہلا تھپڑ مسافر خاتون نے مارا‘جواب میں امیگریشن کی خاتون نے بھی ....مزید پڑھئے‎