قومی خزانے کو سالانہ کھربوں روپے کا نقصان پاکستان میں ٹیکس چوری سے متعلق تہلکہ خیز انکشافات

26  مئی‬‮  2021

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک ) رئیل اسٹیٹ ، اسمگل شدہ اور جعلی سیگریٹوں ، چائے ، ٹائروں ، آٹو لبریکنٹس اور فارما سیٹیکل کے شعبوں میں بے قاعدگیوں اور ٹیکس چوری کے نتیجے میں قومی خزانے کو سالانہ 310 ارب روپے کا نقصان پہنچایا گیا ، تمباکو کی غیر قانونی تجارت

میں 80 ارب ، چائے کی صنعت میں 35 ارب ، ٹائروں اور لبریکنٹس کی صنعت میں 90 ارب ، فارما سیٹیکل سیکٹر میں 45 ارب اور رئیلٹی سیکٹر میں 60 ارب روپے کا نقصان پہنچایا گیا ہے ۔روزنامہ جنگ میں طارق بٹ کی شائع خبر کے مطابق  پیرس میں آئپسوس کی ریسرچ میں اس بات کا انکشاف کیا گیا ہے ۔جس کی دنیا میں 90 بڑی مارکیٹوں اور 120 ممالک تک دسترس ہے ۔ریسرچ میں بتایا گیا ہے کہ اراضی کے کاروبار میں منتقلیاں پیچیدہ نوعیت کی ہیں اور اس میں ٹیکس چوری کی بڑی گنجائش ہے ۔ایک ماہر کے مطابق رئیل اسٹیٹ کی قدر مارکیٹ سے ساٹھ سے ستر فیصد کم ہے ۔ پنجاب میں اراضی کی مالیت کا جدول تیس سال قبل مرتب کیا گیا تھا ۔ 2019 میں ایف بی آر نے غیر منقولہ جائیداد کے لئے ویلیوایشن ٹیبل جاری کیا ۔ رپورٹ کے مطابق پاکستان میں چائے کی درآمد میں 28 فیصد اضافہ ہوا ۔ پاکستان نے 250.8 ملین کلو گرام چائے درآمد کی ۔ پاک افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کے تحت ٹائروں کی تجارت میں 205 فیصد اضافہ ہوا ۔سروے میں بتایا گیا ہے کہ ملک میں جعلی ادویات کا کا روبار بھی ایک سنگین مسئلہ ہے ۔

موضوعات:



کالم



مرحوم نذیر ناجی(آخری حصہ)


ہمارے سیاست دان کا سب سے بڑا المیہ ہے یہ اہلیت…

مرحوم نذیر ناجی

نذیر ناجی صاحب کے ساتھ میرا چار ملاقاتوں اور…

گوہر اعجاز اور محسن نقوی

میں یہاں گوہر اعجاز اور محسن نقوی کی کیس سٹڈیز…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے (آخری حصہ)

میاں نواز شریف کانگریس کی مثال لیں‘ یہ دنیا کی…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے

بودھ مت کے قدیم لٹریچر کے مطابق مہاتما بودھ نے…

جنرل باجوہ سے مولانا کی ملاقاتیں

میری پچھلے سال جنرل قمر جاوید باجوہ سے متعدد…

گنڈا پور جیسی توپ

ہم تھوڑی دیر کے لیے جنوری 2022ء میں واپس چلے جاتے…

اب ہار مان لیں

خواجہ سعد رفیق دو نسلوں سے سیاست دان ہیں‘ ان…

خودکش حملہ آور

وہ شہری یونیورسٹی تھی اور ایم اے ماس کمیونی کیشن…

برداشت

بات بہت معمولی تھی‘ میں نے انہیں پانچ بجے کا…

کیا ضرورت تھی

میں اتفاق کرتا ہوں عدت میں نکاح کا کیس واقعی نہیں…