آئین کوموم کی ناک بنادیاگیا،قانون ہاتھ جوڑکرکھڑاہے ‘ شیخ رشید

7  جون‬‮  2023

لاہور( این این آئی) سابق وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ آئین عمل کے لئے ہوتاہے کیبنٹ میں رکھنے کے لئے نہیں ،آئین کوموم کی ناک بنادیاگیا،قانون ہاتھ جوڑکرکھڑاہے ،وزراء کے بیانات الیکشن ہونے نہ ہونے کے شک وشبہات پیداکررہے ہیں،13اگست اسمبلی توڑنے کی ریڈلائن ہے ورنہ بحران سنگین ہوجاجائے گا۔

ترکیہ نے زلزے معاشی تباہی کے باوجودالیکشن کرایاجس سے اس کے حالات ٹھیک ہوگئے۔ ٹوئٹر پر جاری اپنے بیان میں شیخ رشید نے کہا کہ آئی ایم ایف نے10جون کے ایجنڈے میں پاکستان کونہیں رکھا، آئی ایم ایف کے ساتھ سعودی عرب اورمتحدہ عرب امارات کی مالیاتی امدادبھی خطرے میں ہے،آئی ایم ایف کا کہنا ہے کہ پاکستان میں سیاسی استحکام کی ضرورت ہے،9ہفتے کی حکومت کواندازہ ہے کہ عوام کے دلوں میں ان کے لیے غم وغصہ اور نفرت ہے ،الیکشن میں (ن) لیگ کے ساتھ ہاتھ نہیں ہتھوڑاہوگا۔انہوں نے کہاکہ اگرالیکشن وقت پر نہ ہوئے توحالات مزیدسنگین اورگھمبیر ہوجائیں گے ،لیڈرجیل کی گرمی نہیں برداشت کرسکے لیکن ورکر قائم ہے اورگھبرایا بھی نہیں ،پارٹیاں ورکروں سے چلتی ہیں لیڈروں سے نہیں ،حکومت ریاست کونہیں اپنی تباہ حال سیاست کوبچاناچاہتی ہے ،روزانہ 41ارب روپے کاقرضہ غریب کے گلے پڑ رہاہے۔انہوں نے کہا کہ ملک سیاسی معاشی اقتصادی شدید ترین بحران میں داخل ہوگیاہے ،ترسیلات ،ایکسپورٹ کم ،انڈسٹری بندہو رہی ہے ،گروتھ منفی میں ہے ،ڈالر نایاب ہے اوریہ ہیں زمینی حقائق ہیں،انتظامیہ سپریم کورٹ کے اختیارات میں مداخلت اورججوں کی تضحیک سوچے سمجھے منصوبے کے تحت کررہی ہے ،تمام مسائل کاحل الیکشن میں ہے ،بیگناہوں سے جیلیں بھرنے میں نہیں۔

موضوعات:



کالم



فواد چودھری کا قصور


فواد چودھری ہماری سیاست کے ایک طلسماتی کردار…

ہم بھی کیا لوگ ہیں؟

حافظ صاحب میرے بزرگ دوست ہیں‘ میں انہیں 1995ء سے…

مرحوم نذیر ناجی(آخری حصہ)

ہمارے سیاست دان کا سب سے بڑا المیہ ہے یہ اہلیت…

مرحوم نذیر ناجی

نذیر ناجی صاحب کے ساتھ میرا چار ملاقاتوں اور…

گوہر اعجاز اور محسن نقوی

میں یہاں گوہر اعجاز اور محسن نقوی کی کیس سٹڈیز…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے (آخری حصہ)

میاں نواز شریف کانگریس کی مثال لیں‘ یہ دنیا کی…

نواز شریف کے لیے اب کیا آپشن ہے

بودھ مت کے قدیم لٹریچر کے مطابق مہاتما بودھ نے…

جنرل باجوہ سے مولانا کی ملاقاتیں

میری پچھلے سال جنرل قمر جاوید باجوہ سے متعدد…

گنڈا پور جیسی توپ

ہم تھوڑی دیر کے لیے جنوری 2022ء میں واپس چلے جاتے…

اب ہار مان لیں

خواجہ سعد رفیق دو نسلوں سے سیاست دان ہیں‘ ان…

خودکش حملہ آور

وہ شہری یونیورسٹی تھی اور ایم اے ماس کمیونی کیشن…