ریلوے میں ملازمین کی بھرتیوں پر کوئی پالیسی نہیں  چیف جسٹس بھرتیوں کی ناقص پالیسی پر ریلوے پر برہم

  منگل‬‮ 22 ستمبر‬‮ 2020  |  17:59

اسلام آباد(این این آئی)سپریم کورٹ نے ریلوے ملازم محمد اجمل و دیگر ملازمین کی مستقلی سے متعلق ریلوے کی اپیل خارج کر دی ۔ چیف جسٹس گلزرا احمد کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے کی ۔عدالت نے ریلوے کی اپیل خارج کر دی۔چیف جسٹس بھرتیوں کی ناقص پالیسی پر ریلوے پر برہم ہوگئے اور کہاکہ ریلوے میں ملازمین کی بھرتیوں پر کوئی پالیسی نہیں،چیف جسٹس نے کہاکہ ریلوے انتظامیہ کو کوئی پوچھنے والا نہیں۔ چیف جسٹس نے کہاکہ ریلوے میں کوئی سسٹم ہی نہیں جس کے تحت لوگوں کو نوکری پر رکھیں۔ جسٹس اعجاز الاحسن نے کہاکہ ملازمین دس


دس سال سے ریلوے میں ملازمت کر رہے ہیں، بھرتیوں کے وقت قابلیت اور میرٹ کیوں نہیں دیکھا جاتا ہے، ملازمین کو رکھ لیتے ہیں پھر کہتے ہیں کوئی پالیسی ہی نہیں۔


زیرو پوائنٹ

ڈائیلاگ اور صرف ڈائیلاگ

سینٹ ہونو رینا  فرانس کے علاقے نارمنڈی سے تعلق رکھتی تھیں‘ یہ کیتھولک نن تھیں‘ کنواری تھیں‘ نارمنڈی میںکیتھولک کا قتل عام شروع ہوا تو سینٹ ہونورینا کو بھی مار کر نعش دریائے سین میں پھینک دی گئی‘ یہ نعش بہتی بہتی کون فلوینس  پہنچ گئی‘ کون فلوینس پیرس سے 24 کلومیٹر کے فاصلے پر چھوٹا سا گاﺅں ....مزید پڑھئے‎

سینٹ ہونو رینا  فرانس کے علاقے نارمنڈی سے تعلق رکھتی تھیں‘ یہ کیتھولک نن تھیں‘ کنواری تھیں‘ نارمنڈی میںکیتھولک کا قتل عام شروع ہوا تو سینٹ ہونورینا کو بھی مار کر نعش دریائے سین میں پھینک دی گئی‘ یہ نعش بہتی بہتی کون فلوینس  پہنچ گئی‘ کون فلوینس پیرس سے 24 کلومیٹر کے فاصلے پر چھوٹا سا گاﺅں ....مزید پڑھئے‎