زندگی موت بے شک سب اختیار اللہ کا، آخری وقت میں ائیر ہوسٹس کو طیارے سے نیچے اتار دیا گیا

  جمعہ‬‮ 22 مئی‬‮‬‮ 2020  |  19:50

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) بے شک زندگی موت اللہ کے ہاتھ میں ہے، کراچی میں حادثے کا شکار ہونے والے بدقسمت جہاز سے آخری لمحات میں ائیر ہوسٹس مدیحہ کو طیارے سے نیچے اتار لیا گیا۔ اس طیارے میں 90 سے زائد مسافر سوار تھے، پاکستان ائیر لائن کی ائیر ہوسٹس مدیحہ ارم کو طیارے سے اتار کر ان کی جگہ انعم خان کو سوار کیا گیا، طیارے سے اتارنے کی وجہ معلوم نہیں ہو سکی ہے لیکن یہ اس ائیرہوسٹس کی خوش قسمتی ہے اور زندگی تھی جو انہیں طیارے سے آف لوڈ کر دیا گیا۔ پی آئی اے کے


طیارےمیں 90 مسافر اور 8 عملے کے افراد موجود تھے۔پی آئی اے کے ترجمان عبد الستار کے مطابق پی آئی اے کی پرواز 8303 لاہور سے 90 مسافروں اور 8 عملے کے لوگوں کو لے کر کراچی آرہی تھی۔طیارے کا رابطہ 2 بجکر 37 منٹ پر منقطع ہوا تھا،طیارے میں نجی ٹی وی چینل 24 نیوز کے ڈائریکٹر پروگرامنگ انصار نقوی بھی موجود تھے، اس کے علاوہ بینک آف پنجاب کے صدر ظفر مسعود بھی طیارے میں موجود تھے۔سندھ حکومت نے کراچی کے تمام بڑے اسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کردی ہے۔


زیرو پوائنٹ

مولانا روم کے تین دروازے

ہم تیسرے دروازے سے اندر داخل ہوئے‘ درویش اس کو باب گستاخاں کہتے تھے‘ مولانا کے کمپاﺅنڈ سے نکلنے کے تین اور داخلے کا ایک دروازہ تھا‘ باب عام داخلے کا دروازہ تھا‘ کوئی بھی شخص اس دروازے سے مولانا تک پہنچ سکتا تھا‘شاہ شمس تبریز بھی اسی باب عام سے اندر آئے تھے‘ مولانا صحن میں تالاب ....مزید پڑھئے‎

ہم تیسرے دروازے سے اندر داخل ہوئے‘ درویش اس کو باب گستاخاں کہتے تھے‘ مولانا کے کمپاﺅنڈ سے نکلنے کے تین اور داخلے کا ایک دروازہ تھا‘ باب عام داخلے کا دروازہ تھا‘ کوئی بھی شخص اس دروازے سے مولانا تک پہنچ سکتا تھا‘شاہ شمس تبریز بھی اسی باب عام سے اندر آئے تھے‘ مولانا صحن میں تالاب ....مزید پڑھئے‎