لیاری ندی کے کنارے ہندو آبادی کی جھگیوں میں آگ کیسے لگی؟دوران تحقیقات سب کچھ سامنے آگیا

  بدھ‬‮ 22 جنوری‬‮ 2020  |  17:44

کراچی(این این آئی)ضلعی انتظامیہ اور پولیس کی جانب سے کی گئی تحقیقات میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ لیاقت آباد میں لیاری ندی کے کنارے ہندو آبادی کی جھگیوں میں آگ عبادت کے لیے جلائے گئے چراغ سے لگی ہے۔تحقیقاتی رپورٹ کے مطابق گزشتہ روز ہوئی آتشزدگی سے 180 جھگیاں جل گئی تھیں۔اسسٹنٹ کمشنر اور سب ڈویژنل مجسٹریٹ لیاقت آباد فہیم خان کے مطابق اس آبادی کے پرانے رہائشی پھول فروش بیٹوں ولد موتی لال نے بیان دیا ہے کہ کہ وہ اس آبادی میں اپنی فیملی کے ساتھ رہائش پذیر ہے ان کی والدہ گزشتہ رات ان کے


ماموں کے گھر گئی ہوئی تھی۔پھول فروش بیرجو کے مطابق اس کے بھائی پھول بیچنے کے لئے گئے ہوئے تھے جبکہ ایک بھائی کھلونے بیچنے گیا تھا گھر میں اس کی چھوٹی بہن اور 9 سالہ بھتیجی تھی۔بیرجو کے مطابق اس نے تیل منگوایا اس کی بہن نے چراغ جلایا اور پیٹی پر رکھ دیا جس کے بعد وہ روٹیاں لینے چلا گیا جبکہ بھتیجی کھیلنے کے لیے باہر نکلی تو تیل ختم ہونے پر بجھنے سے قبل چراغ سے شعلہ لپکا جس سے جھگی کو آگ لگ گئی۔بیرجوکے مطابق آگ تیز ہوا کی وجہ سے پوری آبادی میں پھیل گئی اور جب وہ روٹیاں لے کر واپس آیا تو پوری آبادی شعلوں کی لپیٹ میں تھی۔ایس ڈی ایم لیاقت آباد فہیم خان کے مطابق یہ ابتدائی شہادت سامنے آئی ہے تاہم اس سلسلے میں تحقیقات جاری ہیں۔فہیم خان کے مطابق ابتدائی سروے کے مطابق علاقے میں جلنے والی جھگیوں کی تعداد180 ہے اور آگ سے 200 سے زائد افراد متاثر ہوئے ہیں۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

قاسم پاشا کی گلیوں میں

آیا صوفیہ کے سامنے دھوپ پڑی تھی‘ آنکھیں چندھیا رہی تھیں‘ میں نے دھوپ سے بچنے کے لیے سر پر ٹوپی رکھ لی‘ آنکھیں ٹوپی کے چھجے کے نیچے آ گئیں اور اس کے ساتھ ہی ماحول بدل گیا‘ آسمان پر باسفورس کے سفید بگلے تیر رہے تھے‘ دائیں بائیں سیکڑوں سیاح تھے اور ان سیاحوں کے درمیان ....مزید پڑھئے‎

آیا صوفیہ کے سامنے دھوپ پڑی تھی‘ آنکھیں چندھیا رہی تھیں‘ میں نے دھوپ سے بچنے کے لیے سر پر ٹوپی رکھ لی‘ آنکھیں ٹوپی کے چھجے کے نیچے آ گئیں اور اس کے ساتھ ہی ماحول بدل گیا‘ آسمان پر باسفورس کے سفید بگلے تیر رہے تھے‘ دائیں بائیں سیکڑوں سیاح تھے اور ان سیاحوں کے درمیان ....مزید پڑھئے‎