بجلی صارفین پر 17 ارب 20 کروڑ روپے کا اضافی بوجھ، نیپرا کا پاور ڈویژن حکام سے بڑا سوال

  بدھ‬‮ 20 ‬‮نومبر‬‮ 2019  |  19:09

اسلام آباد (این این آئی)نیپرا نے بجلی تقسیم کار کمپنیوں طرف سے رواں مالی سال کی پہلی سہ ماہی ایڈجسٹمنٹ کے ذریعے بجلی صارفین پر سترہ ارب بیس کروڑ روپے کا اضافی بوجھ ڈالنے کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کر لیا۔ بدھ کو نیپرا نے اسلام آباد میں رواں مالی سال کہ پہلی سہ ماہی کیلئے سرکاری تقسیم کار کمپنیوں کی پاور پرچیز پرائس کی درخواستوں کی سماعت کی کمپنیوں نے جولائی سے ستمبر تک کی پاور پرچیز پرائس میں اضافے کے باعث صارفین پر 17ارب 20کروڑ روپے صارفین کو منتقل کرنے کی درخواست کی تھی بجلی تقسیم کار کمپنیوں کی


طرف سے یہ رقم آپریشنز اینڈ مینٹیننس، بجلی ترسیلی اور تقسیمی نقصانات سمیت دیگر اخراجات مین اضافے کی مد میں مانگی گئی تھی نیپرا نے پاور ڈویژن حکام سے پوچھا کہ مختلف ایڈجسٹمنٹس سے مسلسل بجلی صارفین پر بوجھ پڑ رہا ہے، پاور ڈویڑن کے جوائنٹ سیکرٹری پاور فنانس زرگام اسحاق خان نے تسلیم کیا کہ بجلی صارفین پر بوجھ پڑا ہے تاہم انہوں نے کہا جو بھی اضافہ مانگا گیا قانون کے مطابق ہے حکومت بجلی سستی کرنے کیلئے قابل تجدید توانائی کے فروغ سمیت مختلف اقدامات کر رہی ہے۔

loading...