ملک بھر میں تعلیمی ادارے کھلنے کیلئے تیار وزیر تعلیم شفقت محمود کا این سی او سی میں دیا گیا اہم بیان سامنے آگیا

  جمعرات‬‮ 27 اگست‬‮ 2020  |  14:56

اسلام آباد(این این آئی)وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمودنے کہا ہے کہ دو شعبوں میں تعلیمی اداروں کو کھولنا بنیادی چیلنج ہے ،تعلیمی ادارے کھولنے کا حتمی فیصلہ 7 ستمبر کو تمام اسٹیک ہولڈرز کے اتفاق رائے کے بعد کیا جائیگا۔جمعرات کو نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کا ملک میں تعلیمی ادارے کھولنے پر یک نکاتی ایجنڈہ پر اجلاس ہواجس میں مدرسہ، پرائیویٹ سمیت تمام تعلیمی اداروں کے نمائندوں کو اجلاس میں دعوت دی گئی۔اجلاس میں وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود ، معاون خصوصی صحت ڈاکٹر فیصل سلطان سمیت اعلیٰ سول و عسکری حکام شریک ہوئے ،آزاد کشمیر ، گلگت بلتستان


کے نمائندے بھی اجلاس میں وڈیو لنک پر موجود تھے،اجلاس سکول یونیورسٹیز سمیت تعلیمی ادارے کھولنے پر مشاورت کی گئی،فورم نے شرکاء کو کورونا کی موجودہ صورت حال سے آگاہ کیا،شرکاء کو تعلیمی ادارے کھولنے کے بعد رسک اور چیلنجز سے آگاہ کیا گیا۔ شفقت محمود نے کہاکہ دو شعبوں میں تعلیمی اداروں کو کھولنا بنیادی چیلنج ہے ، تعلیمی ادارے کھولنے کے کیا انڈیکیٹرز ہیں اور صحت کے کیا حفاظتی اقدامات کئے جاتے ہیں ۔ شفقت محمود نے کہاکہ حفظان صحت کے لئے ماسک ، سماجی دوری اور ایس او پیز پر عملدرآمد کے اقدامات یقینی بنائیں۔ شفقت محمود نے کہاکہ تعلیمی ادارے کھولنے کا حتمی فیصلہ 7 ستمبر کو تمام اسٹیک ہولڈرز کے اتفاق رائے اور ان پٹ کے بعد کیا جائیگا۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

کارٹرفارمولا

جمی کارٹر امریکا کے 39ویں صدر تھے‘ یہ 1977ءسے 1981ءتک دنیا کی سپر پاور کے سربراہ رہے‘ یہ 1924ءمیں جارجیا کے چھوٹے سے گاﺅں پلینز میں پیدا ہوئے ‘ زمین دار فیملی کے ساتھ تعلق تھا‘ والد مونگ پھلی اگاتے تھے‘ جوانی میں نیوی جوائن کر لی‘ والد کے انتقال کے بعد کھیتی باڑی شروع کر دی‘یہ بھی ....مزید پڑھئے‎

جمی کارٹر امریکا کے 39ویں صدر تھے‘ یہ 1977ءسے 1981ءتک دنیا کی سپر پاور کے سربراہ رہے‘ یہ 1924ءمیں جارجیا کے چھوٹے سے گاﺅں پلینز میں پیدا ہوئے ‘ زمین دار فیملی کے ساتھ تعلق تھا‘ والد مونگ پھلی اگاتے تھے‘ جوانی میں نیوی جوائن کر لی‘ والد کے انتقال کے بعد کھیتی باڑی شروع کر دی‘یہ بھی ....مزید پڑھئے‎