بدھ‬‮ ، 24 جولائی‬‮ 2024 

ہم غریبوں کی خیرات تک نہیں چھوڑتے، قدرت ہمیں اس اخلاقیات کے ساتھ جوتے نہیں مارے گی تو کیا کرے گی؟ امریکی وزیر خارجہ کے بعد وزیر دفاع نے بھی آج پاکستان کے آرمی چیف سے رابطہ کر لیا، امریکہ بار بار ہم سے رابطہ کیوں کر رہا ہے؟ جاوید چودھری کاتجزیہ

datetime 8  جنوری‬‮  2020
ہمارا واٹس ایپ چینل جوائن کریں

حکومت نے جولائی 2008ء میں خط غربت سے نیچے زندگی گزارنے والے انتہائی غریب لوگوں کی مدد کے لیے بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام شروع کیا تھا‘ حکومت ان لوگوں کو سہ ماہی پانچ ہزار روپے امداد دیتی تھی‘ آج حکومت نے اس پروگرام میں گھپلوں کے انتہائی افسوس ناک اعداد و شمار جاری کیے، پتا چلا گریڈ 17 سے لے کر گریڈ 21 تک کے دو ہزار 534 سرکاری افسر بھی بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام سے خیرات وصول کرتے رہے،

حکومت کے اعدادوشمار کے مطابق ان میں گریڈ 17 کے 1240 افسر،گریڈ 18 کے 342 افسر، گریڈ 19 کے 429 افسر، گریڈ 20 کے 59 افسر اور گریڈ 21 کے تین اعلیٰ افسر شامل ہیں، یہ لوگ اپنی بیگمات اور خاندان کے لوگوں کے نام پر خیرات وصول کرتے رہے، آپ ملک کا اخلاقی دیوالیہ پن ملاحظہ کیجیے‘ ہمارے گریڈ 17 سے گریڈ 21 تک کے اعلیٰ افسر 10 سال خود کو مسکین ثابت کر کے سرکاری خیرات کھا تے رہے اور ان کو شرم تک نہیں آئی، ہم غریبوں کی خیرات تک نہیں چھوڑتے لیکن ہم اس اخلاقیات کے ساتھ امریکہ، اسرائیل اور یورپ کا مقابلہ بھی کرنا چاہتے ہیں، ہم پوری دنیا میں اسلام کا جھنڈا بھی لہرانا چاہتے ہیں اور دنیا کو یہ پیغام بھی دینا چاہتے ہیں ہم معتبر ترین‘ مقدس ترین اور ایمان دار ترین قوم ہیں، قدرت ہمیں اس اخلاقیات کے ساتھ جوتے نہیں مارے گی تو کیا کرے گی؟ کیا ہم مزید ذلت کے حق دار نہیں ہیں‘ آپ چند لمحوں کے لئے یہ ضرور سوچیے گا۔ ایران نے آج صبح ساڑھے پانچ بجے عراق میں امریکہ کے دو فوجی اڈوں پربائیس میزائل داغ کر جنرل قاسم سلیمانی کی ہلاکت کا بدلہ لے لیا، آیت اللہ خامنہ ای نے حملے کے بعد کہا، یہ امریکہ کے منہ پر طمانچہ ہے اور یہ جب تک خطے سے نکل نہیں جاتا ہماری طرف سے کارروائیاں جاری رہیں گی، امریکی وزیر خارجہ کے بعد وزیر دفاع نے بھی آج پاکستان کے آرمی چیف سے رابطہ کر لیا، امریکا بار بار ہم سے کیوں رابطہ کر رہا ہے، آج سینٹ نے بھی آرمی ایکٹ میں ترمیم کی منظوری دے دی۔

موضوعات:



کالم



جارجیا میں تین دن


یہ جارجیا کا میرا دوسرا وزٹ تھا‘ میں پہلی بار…

کتابوں سے نفرت کی داستان(آخری حصہ)

میں ایف سی کالج میں چند ہفتے یہ مذاق برداشت کرتا…

کتابوں سے نفرت کی داستان

میں نے فوراً فون اٹھا لیا‘ یہ میرے پرانے مہربان…

طیب کے پاس کیا آپشن تھا؟

طیب کا تعلق لانگ راج گائوں سے تھا‘ اسے کنڈیارو…

ایک اندر دوسرا باہر

میں نے کل خبروں کے ڈھیر میں چار سطروں کی ایک چھوٹی…

اللہ معاف کرے

کل رات میرے ایک دوست نے مجھے ویڈیو بھجوائی‘پہلی…

وہ جس نے انگلیوں کوآنکھیں بنا لیا

وہ بچپن میں حادثے کا شکار ہوگیا‘جان بچ گئی مگر…

مبارک ہو

مغل بادشاہ ازبکستان کے علاقے فرغانہ سے ہندوستان…

میڈم بڑا مینڈک پکڑیں

برین ٹریسی دنیا کے پانچ بڑے موٹی ویشنل سپیکر…

کام یاب اور کم کام یاب

’’انسان ناکام ہونے پر شرمندہ نہیں ہوتے ٹرائی…

سیاست کی سنگ دلی ‘تاریخ کی بے رحمی

میجر طارق رحیم ذوالفقار علی بھٹو کے اے ڈی سی تھے‘…