پاکستان،کورونا وائرس سے مزید 29 افراد جاں بحق ، تعداد22408 ہوگئی ، 1128کیسز سامنے آگئے

  اتوار‬‮ 4 جولائی‬‮ 2021  |  15:37

اسلام آباد (این این آئی)کورونا وائرس کی جاری تیسری لہر کے دوران مزید 29افراد جاں بحق ہوگئے ، 1128کیسز سامنے آگئے ۔نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر (این سی او سی) کے اعداد و شمار کے مطابق پاکستان میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے مزید 1 ہزار 228 کیسز سامنے آئے ہیں، مزید 29 افراد اس موذی وباء کے سامنے زندگی کی بازی ہار گئے،مزید 897 مریض شفایاب ہو گئے، مثبت کیسز کی شرح ڈھائی فیصد سے زائد ہو گئی۔ملک بھر میں کورونا وائرس سے انتقال کرنے والوں کی مجموعی تعداد 22 ہزار 408 ہو گئی ہے، کْل


کورونا مریضوں کی تعداد 9 لاکھ 62 ہزار 313 ہو چکی ہے۔ملک بھر میں ہسپتالوں، قرنطینہ سینٹرز اور گھروں میں کورونا وائرس کے کل 32 ہزار 621 مریض زیرِ علاج ہیں جن میں سے 1 ہزار 875 مریضوں کی حالت تشویش ناک ہے، کْل 9 لاکھ 7 ہزار 284 مریض اب تک اس بیماری سے شفایاب ہو چکے ہیں۔گزشتہ 24 گھنٹوں میں ملک میں کورونا وائرس کے مزید 47 ہزار 832 ٹیسٹ کیئے گئے، اب تک کْل 1 کروڑ 47 لاکھ 33 ہزار 30 کورونا ٹیسٹ کیئے جا چکے ہیں۔پاکستان بھر میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 2 لاکھ 88 ہزار 295 افراد کو کورونا وائرس کی ویکسین دی گئی، اب تک کْل 1 کروڑ 70 لاکھ 751 کورونا ویکسین کی خوراکیں دی جا چکی ہیں۔پنجاب میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد دیگر صوبوں سے زیادہ ہے، یہاں اب تک 3 لاکھ 46 ہزار 728 کورونا کے مریض رپورٹ ہوئے ہیں، یہاں کْل ہلاکتیں بھی دیگر صوبوں سے زیادہ ہیں جو 10 ہزار 772 ہو چکی ہیں۔سندھ میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد 3 لاکھ 39 ہزار 962 ہو چکی ہے، اس سے کْل اموات 5 ہزار 512 ہو گئیں۔خیبر پختون خوا میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد 1 لاکھ 38 ہزار 421 ہو چکی ہے، جبکہ اس سے یہاں کْل اموات 4 ہزار 336 ہو گئیں۔وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں 82 ہزار 916 کورونا وائرس سے متاثرہ مریض اب تک سامنے آئے ہیں، اب تک یہاں کْل 779 افراد اس وباء سے جان کی بازی ہار چکے ہیں۔کورونا وائرس کے بلوچستان میں 27 ہزار 387 مریض اب تک رپورٹ ہوئے ہیں جہاں 312 افراد اس مرض سے انتقال کر چکے ہیں۔آزاد جموں و کشمیر میں کورونا وائرس کے اب تک 20 ہزار 505 مریض رپورٹ ہوئے ہیں، اس کے باعث اب تک یہاں کْل 586 مریض وفات پا چکے ہیں۔گِلگت بلتستان میں 6 ہزار 394 کورونا وائرس کے مریض سامنے آئے ہیں ،اس سے اب تک 111 افراد جاں بحق ہوئے ہیں۔


زیرو پوائنٹ

دو ہزاربچوں کا محسن

چترال کے دو حصے ہیں‘ اپر چترال اور لوئر چترال‘ دونوں اضلاع الگ الگ ہیں‘ لوئر چترال دریا کے کنارے آباد ہے اور وادی نما ہے جب کہ اپر چترال پہاڑوں پر چپکے‘ لٹکے اور پھنسے ہوئے دیہات کی خوب صورت ٹوکری ہے‘ ہم اتوار کی صبح اپر چترال کے ضلعی ہیڈ کوارٹر بونی کے لیے روانہ ہوئے‘ سفر مشکل ....مزید پڑھئے‎

چترال کے دو حصے ہیں‘ اپر چترال اور لوئر چترال‘ دونوں اضلاع الگ الگ ہیں‘ لوئر چترال دریا کے کنارے آباد ہے اور وادی نما ہے جب کہ اپر چترال پہاڑوں پر چپکے‘ لٹکے اور پھنسے ہوئے دیہات کی خوب صورت ٹوکری ہے‘ ہم اتوار کی صبح اپر چترال کے ضلعی ہیڈ کوارٹر بونی کے لیے روانہ ہوئے‘ سفر مشکل ....مزید پڑھئے‎