’’ لندن نہیں جاؤں گا‘‘ طنزو مزاح سے بھرپور فلم عیدالاضحٰی پر سنیما گھروں کی زینت بنے گی

  اتوار‬‮ 19 جون‬‮ 2022  |  17:18

کراچی(این این آئی) ’’ لندن نہیں جاؤں گا‘‘ طنزو مزاح سے بھرپور فلم ہوگی جس میں گوہر رشید، ہمایوں سعید اور مہوش حیات اداکاری کے جوہر دکھاتے نظر آئیں گے، فلم عیدالاضحٰی پر سنیما گھروں کی زینت بنے گی۔لالی ووڈ کے سپر اسٹار ہماریوں سعید نے اپنی آنے والی فلم

’’لندن نہیں جاؤں گا‘‘ کی تشہیر کے دوران ایک انٹرویو میں بتایا ہے کہ اداکارہ مہوش حیات کس سے شادی کرنا چاہتی ہیں۔ان دنوں ہمایوں سعید ساتھی اداکارہ مہوش حیات اور اداکار گوہر رشید کے ہمراہ اگلے ماہ ریلیز ہونے والی فلم ‘لندن نہیں جاؤں گا’ کی تشہیر میں مصروف ہیں جس کی کئی ویڈیوز سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہیں۔حال ہی میں مہوش حیات، ہمایوں سعید اور گوہر رشید نے ایک انٹرویو دیا ہے جس کی ویڈیو سوشل میڈیا کی زینت بنی ہوئی ہے، اس ویڈیو کی خاص بات یہ ہے کہ اس میں ہمایوں سعید نے انکشاف کیا ہے کہ مہوش حیات کس سے شادی کرنا چاہتی ہیں۔وائرل ہونے والی ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ اداکار ہمایوں سعید کا کہتے ہیں کہ اداکارہ مہوش حیات شادی کے لیے گورے یعنی انگریز یا کسی غیر ملکی شخص کا انتخاب کریں گی۔جس پر اداکارہ جواب دیتی ہیں کہ ایسا کچھ نہیں ہے، یہ جھوٹ بول رہے ہیں’گورا ہو یا کالا ہو، بس دل والا ہونا چاہیے‘۔ اس پر ہمایوں سعید نے کہا کہ ’’مہوش سیٹ پر ہر وقت کہتی رہتی ہیں کہ انہیں ’گورا‘ چاہیے‘‘۔انٹرویو میں مہوش حیات نے یہ بھی بتایا کہ جب وہ پہلی مرتبہ ہمایوں سعید سے ملی تھیں تو ان کی لڑائی ہوگئی تھی ہمایوں سعید نے انٹرویو میں یہ بھی بتایا کہ مہوش حیات کے سیٹ پر آتے ہی رونق ہوجاتی ہے، مہوش پورا وقت خود کو آئینے میں دیکھتی رہتی ہیں اور کسی کو پریشان نہیں کرتیں، مہوش نے کہا کہ میں موبائل فون میں مصروف رہتی ہوں اور انسٹاگرام اسکرول کرتی رہتی ہوں۔



زیرو پوائنٹ

چودھری برادران میں پھوٹ کیسے پڑی؟

میں نے مونس الٰہی سے پوچھا ’’خاندان میں اختلافات کہاں سے شروع ہوئے؟‘‘ ان کا جواب تھا’’جائیداد کی تقسیم سے‘ ظہور الٰہی فیملی نے اپنے اثاثے ہمارے بچپن میں آپس میں تقسیم کر لیے تھے صرف لاہور کا گھر رہ گیا تھا‘ یہ گھر ہمارے نانا چودھری ظہور الٰہی نے بنانا شروع کیا تھا لیکن مکمل ہونے سے قبل ہی ....مزید پڑھئے‎

میں نے مونس الٰہی سے پوچھا ’’خاندان میں اختلافات کہاں سے شروع ہوئے؟‘‘ ان کا جواب تھا’’جائیداد کی تقسیم سے‘ ظہور الٰہی فیملی نے اپنے اثاثے ہمارے بچپن میں آپس میں تقسیم کر لیے تھے صرف لاہور کا گھر رہ گیا تھا‘ یہ گھر ہمارے نانا چودھری ظہور الٰہی نے بنانا شروع کیا تھا لیکن مکمل ہونے سے قبل ہی ....مزید پڑھئے‎