ویسٹ انڈیز نے انگلینڈ کو 10سال بعد ٹیسٹ سیریز میں شکست دیکر سیریز میں فیصلہ کن برتری حاصل کرلی

  اتوار‬‮ 3 فروری‬‮ 2019  |  15:00

انٹیگا(این این آئی)ویسٹ انڈیز نے کیماروچ کی عمدہ باؤلنگ کی بدولت انگلینڈ کو دوسرے ٹیسٹ میچ میں باآسانی 10 وکٹوں سے شکست دے کر سیریز میں 0۔2 کی فیصلہ کن برتری حاصل کرتے ہوئے انگلش ٹیم کے خلاف 10سال بعد سیریز جیتنے کا اعزاز حاصل کر لیا۔تفصیلات کے مطابق انٹیگا کے سر ویوین رچرڈز اسٹیڈیم میں کھیلے گئے سیریز کے دوسرے ٹیسٹ میچ میں ویسٹ انڈیز نےٹاس جیت پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا تھا۔انگلینڈ کی ٹیم جونی بیئراسٹو اور معین علی کی نصف سنچریوں کے باوجود پہلی اننگز میں 187 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی تھی، کیماروچ نے چار


اور شینن گیبریئل نے تین وکٹیں حاصل کیں۔جواب میں ویسٹ انڈین ٹاپ آرڈر نے عمدہ کھیل پیش کرتے ہوئے 306 رنز بنا کر پہلی اننگز میں 119 رنز کی برتری حاصل کی، ڈیرن براوو 50، شے ہوپ 44، کریگ بریتھ ویٹ 49 اور جان کیمبل 47رنز بنا کر نمایاں بلے باز رہے۔انگلینڈ کی بیٹنگ لائن دوسری اننگز میں بھی ناکامی سے دوچار ہوئی اور کیماروچ کے ساتھ ساتھ کپتان جیسن ہولڈر نے چار وکٹیں لے کر انگلش ٹیم کی میچ میں شکست کو یقینی بنا دیا۔انگلینڈ کی پوری ٹیم دوسری اننگز میں 132 رنز بنا کر ڈھیر ہو گئی اور جوز بٹلر 24رنز بنا کر ٹیم کے سب سے کامیاب بلے باز رہے۔ویسٹ انڈیز کو میچ میں کامیابی کیلئے 14 رنز کا ہدف ملا جو اس نے محض 13 گیندوں پر حاصل کر کے میچ میں 10 وکٹوں سے کامیابی حاصل کر لی اس فتح کے ساتھ ہی ویسٹ انڈیز نے سیریز میں 2۔0 کی فیصلہ کن برتری حاصل کر کے انگلینڈ کے خلاف 10 سال بعد سیریز جیتنے کا اعزاز حاصل کر لیا۔کیماروچ کو میچ میں 8 وکٹیں لینے پر مین آف دی میچ قرار دیا گیا۔ویسٹ انڈیز اور انگلینڈ کی کرکٹ ٹیموں کے درمیان تین ٹیسٹ میچوں پر مشتمل سیریز کا آخری ٹیسٹ میچ 9 سے 13 فروری تک کھیلا جائیگا اس کے بعد دونوں ٹیموں کے درمیان پانچ ایک روزہ اور تین ٹی ٹونٹی انٹرنیشنل میچوں کی سیریز کھیلی جائیگی۔


موضوعات:

زیرو پوائنٹ

موچی شاعر

آپ اگر جڑانوالہ سے نکلیں تو 25 کلو میٹر بعد روڈالہ کا چھوٹا سا قصبہ آ جاتا ہے‘ روڈالہ میں سڑک کے کنارے ایک موچی چالیس سال سے لوگوں کے جوتے مرمت کررہا ہے‘ اس کا نام منور شکیل ہے اور یہ خاندانی موچی ہے‘ والد چک 280 گ ب منج میں جوتے بناتا تھا‘ منور اس کا اکلوتا بیٹا ....مزید پڑھئے‎

آپ اگر جڑانوالہ سے نکلیں تو 25 کلو میٹر بعد روڈالہ کا چھوٹا سا قصبہ آ جاتا ہے‘ روڈالہ میں سڑک کے کنارے ایک موچی چالیس سال سے لوگوں کے جوتے مرمت کررہا ہے‘ اس کا نام منور شکیل ہے اور یہ خاندانی موچی ہے‘ والد چک 280 گ ب منج میں جوتے بناتا تھا‘ منور اس کا اکلوتا بیٹا ....مزید پڑھئے‎