مونس الٰہی نے سب کچھ بے نقاب کردیا،اسمبلی توڑنے کے لئے چوہدری پرویز الٰہی عمران خان سے زیادہ فوج سے رابطے میں ہیں، تہلکہ خیز دعویٰ

  اتوار‬‮ 4 دسمبر‬‮ 2022  |  20:58

لاہور (آن لائن) جمعیت علمائے پاکستان (سواد اعظم)کے مرکزی صدر پیر سید محمد محفوظ مشہدی نے کہا ہے کہ عمران خان یوٹرن کے بادشاہ ہیں، اسمبلیاں تحلیل کرنے کا اعلان واپس لے لیں گے جبکہ چوہدری پرویز الٰہی کو اقتدار سے مطلب ہے،وہ وزیراعلیٰ رہنا چاہتے ہیں،

عمران خان کے ساتھ ہوں یا شہباز شریف کے ساتھ، انہیں فرق نہیں پڑتا۔انہوں نے اپنی سیاسی صف بندی ہمیشہ فوج کو دیکھ کر ہی کی ہے۔ان کے صاحبزادے مونس الٰہی نے سب کچھ بے نقاب کردیا ہے کہ جنرل قمر جاوید باجوہ کے کہنے پر ق لیگ نے عمران خان کی حمایت کی۔اس لئے اسمبلی توڑنے کے لئے چوہدری پرویز الٰہی عمران خان سے زیادہ فوج سے رابطے میں ہیں۔ پی ٹی آئی چیئرمین ایسی مشکل میں ہیں کہ ان کے پاس پارلیمنٹ میں واپسی اور حکومت سے غیر مشروط مذاکرات کے سوا کوئی چارہ کار نہیں۔ لانگ مارچ میں ہزیمت کے بعد عمران خان کے پاس مذاکرات کے سوا کوئی حربہ باقی نہیں رہ گیا کیونکہ حکومت نے پی ٹی آئی کی افراتفری کی سیاست کا دباؤ قبول نہیں کیا۔جتنی محنت عمران خان کی،اتنا اثر نہیں ہوا۔جے یو پی اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے پیر محفوظ مشہدی نے کہا کہ عمران خان سیاست کو مذاق بنانے کے بجائے، سنجیدگی کا مظاہرہ کریں۔دوغلی پالیسی سے عمران خان کو پہلے کوئی فائدہ ہوا، اور نہ ہی مزید ہونے کی توقع ہے۔ اس لیے بہتر ہوگا کہ وہ سمجھ داری کا ثبوت دیتے ہوئے،پر امن سنجیدہ سیاست کریں۔



موضوعات:

زیرو پوائنٹ

عمران خان کی جنرل باجوہ سے دو ملاقاتیں

یہ 18 اگست 2022ء کی شام تھی‘ صدر عارف علوی کی صاحب زادی نے رات آٹھ بجے اپنی چند سہیلیوں کو کھانے پر ایوان صدر بلا رکھا تھا لیکن پھر سوا سات بجے فون آیا اور صدر پرائیویٹ کار میں صرف ملٹری سیکرٹری کے ساتھ ایوان صدر سے نکل گئے‘ ان کے ساتھ پروٹوکول اور سیکورٹی کی کوئی گاڑی نہیں ....مزید پڑھئے‎

یہ 18 اگست 2022ء کی شام تھی‘ صدر عارف علوی کی صاحب زادی نے رات آٹھ بجے اپنی چند سہیلیوں کو کھانے پر ایوان صدر بلا رکھا تھا لیکن پھر سوا سات بجے فون آیا اور صدر پرائیویٹ کار میں صرف ملٹری سیکرٹری کے ساتھ ایوان صدر سے نکل گئے‘ ان کے ساتھ پروٹوکول اور سیکورٹی کی کوئی گاڑی نہیں ....مزید پڑھئے‎