امارات نے اسرائیلی جرائم پیشہ عناصر کے لیے سنہری منڈیاں کھول دیں

  جمعہ‬‮ 21 جنوری‬‮ 2022  |  20:55

تل ابیب(این این آئی)اسرائیلی ٹی وی نے کہا ہے کہ عرب ممالک کے ساتھ معاہدوں نے اسرائیلی جرائم پیشہ بالخصوص منشیات کی اسمگلنگ، منی لانڈرنگ اور جسم فروشی کے لیے سنہری منڈیاں کھول دی ہیں۔اسرائیلی ٹی وی چینل نے اسرائیلی حکام کے حوالے سے کہا کہ اسرائیل

دنیا بھرمیں منی لانڈرنگ اور منشیات کی سمگلنگ کے شعبے میں مجرموں کی برآمد کے حوالے سے پیش پیش ہے۔ کیونکہ یہ لوگ بین الاقوامی گروہوں کے ساتھ تعلقات قائم کرنے کے لیے تعاون کے معاہدوں سے کا فائدہ اٹھاتے ہیں۔رپورٹ میں نشاندہی کی گئی کہ امارات کے ساتھ تعلقات معمول پر لانے کے معاہدے کے پہلے سال میں داخل ہونے کے ساتھ دبئی اسرائیلی جرائم پیشہ گروہوں کے لیے ایک اہم مقام بن گیا کیونکہ ان گروہوں نے جسم فروشی، جوا، منی لانڈرنگ اور منشیات، خاص طور پر کوکین کی مارکیٹیں کھول دی ہیں۔قابض پولیس کے ایک اہلکار نے بتایا کہ جرائم پیشہ افراد اور جرائم پیشہ گروہوں کی ایک بڑی تعداد پہلے ہی اپنے کاروبار دبئی منتقل کر چکی ہے، یہ جانتے ہوئے کہ پولیس ان کا تعاقب اور کنٹرول نہیں کر سکے گی۔ایک اور اہلکار نے چینل کے ساتھ ایک انٹرویو میں زور دیا کہ دبئی میں انتہائی اعلی معیار زندگی نے اسرائیلی گینگوں کو شہر میں مقامی لوگوں اور غیر ملکیوں کے ساتھ اپنی ممنوعہ تجارت کے لیے ایک نیا بازار کھولنے کا سنہری موقع فراہم کیا۔قابض اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے درمیان معاہدہ اگست 2020 میں ہوا تھا۔



موضوعات:

زیرو پوائنٹ

یہ بھی پاکستان ہے

یہ تین لوگوں کی تین کہانیاں ہیں‘ میں جب ان تینوں لوگوں سے متعارف ہوا‘ میں نے ان کی داستانیں سنی تو میرا پہلا تاثر تھا کیا یہ بھی پاکستانی ہیں؟ اور اگر یہ پاکستانی ہیں تو پھر ہم کون ہیں؟ آپ کو اس سوال کے جواب سے پہلے یہ تین کہانیاں پڑھنی چاہییں۔ پہلی کہانی کے ہیرو خالد جاوید ....مزید پڑھئے‎

یہ تین لوگوں کی تین کہانیاں ہیں‘ میں جب ان تینوں لوگوں سے متعارف ہوا‘ میں نے ان کی داستانیں سنی تو میرا پہلا تاثر تھا کیا یہ بھی پاکستانی ہیں؟ اور اگر یہ پاکستانی ہیں تو پھر ہم کون ہیں؟ آپ کو اس سوال کے جواب سے پہلے یہ تین کہانیاں پڑھنی چاہییں۔ پہلی کہانی کے ہیرو خالد جاوید ....مزید پڑھئے‎